پولیس نے 7 سالہ بچی کو قتل کرنے کے بعد زیادتی کا نشانہ بنانے والے ملزمان کو گرفتار کرلیا

Spread the love

لاہور میں کمسن بچی کو اغوا کے بعد قتل کرکے زیادتی کا نشانہ بنانے کی لرزہ خیز واردات ہوئی جہاں کل صبح 7 سالہ بچی عائشہ گھر کے پاس سے لاپتا ہوگئی تھی جس پر بچی کے والد نے تھانے میں اطلاع دی تو پولیس نے واقعے کا مقدمہ درج کرلیا۔

بچی کی لاش کل شام ہی ساڑھے 7 بجے کے قریب موہلنوال کے قریب تالاب سے ملی۔
واقعے کی تحقیقات پر محلے دار خاتون نے بتایا کہ اس نے بچی کو اس کے رشتے دار رضوان کے ساتھ جاتے دیکھا تھا جس پرپولیس نے خاتون کی نشاندہی پر کارروائی کرتے ہوئے ملزم رضوان کو گرفتار کرلیا۔

پولیس کے مطابق دورانِ تفتیش ملزم نے اعتراف کیا کہ وہ چیز دلانے کے بہانے بچی کو بہلاکر ساتھ لے گیا، اس نے پہلے بچی کو قتل کیا اس کے بعد لاش کی بے حرمتی کرتے ہوئے زیادتی کا نشانہ بنایا جب کہ اس کا ساتھی ملزم اللہ دتہ اس سارے عمل کی نگرانی کرتا رہا اور پھر بعد اس نے بھی بچی سے زیادتی کی۔
ملزم رضوان کے ساتھ اللہ دتہ کو بھی گرفتار کرکے دونوں کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا ہے جب کہ ملزمان سے مزید تفتیش کی جارہی ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں