آخر سندھ کے سرداروں کیلئے سزا کے دروازے کیوں بند ہیں۔

Spread the love

حکومت ام رباب چانڈیو کیس کے مرکزی کردار ادا کرنے والے ملزمان کو جلد از جلد گرفتار کریں۔عوامی رائے

سندھ(نمائندہ خصوصی)گلوبل ٹائمز میڈیا رپورٹ کے مطابق ام رباب چانڈیو کیس کے مرکزی کردار ادا کرنے والے ملزمان اپنی عبوری ضمانت کا ناجائز فائدہ اٹھا رہے ہے جو افسوس ناک ہے گلوبل ٹائمز میڈیا تفصیلات کے مطابق شرمناک واقعہ تہرے قتل/ام رباب چانڈیو کیس کے مرکزی ملزمان رکن سندھ اسمبلی پ پ ایم پی اے برہان چانڈیو غریب عوام کا پیسا کسی امیر کہ بیٹے کی شادی میں شراب پیکر لٹاتے ہوئے کہاں ہے کہ وزیر اعلیٰ سندھ کہاں ہے پاکستان کی انفورسمنٹ ادارے آخر ان سرداروں اور وڈیروں کو کیوں کوئی کچھ کہہ نہیں سکتا سندھ عوام کا کہنا ہے کہ کیا ان سرداروں اور وڈیروں کیلئے قانون کے دروازے بند ہیں کیا یہ ہمیشہ انسانیت کا خون بہا کے ایسے ہی بیل پر ہونگے کیا بس صرف غریبوں کہ لیئے ہی قانون ہے انہوں نے کہا کہ ہم پاکستان کی عدلیہ سے یہ سوال پوچھنا چاہتے ہیں کیا سردار اور جاگیردار ایسے توہین عدالت کرتے رہیں ان کیلئے کوئی قانون نہیں کیا سردار اور جاگیردار تین قتل کریں ان کیلئے قانون نہیں کیا سردار اور جاگیردار غیر قانونی شکار کریں ان کیلئے کوئی قانون نہیں کیا یہ غیر قانون اسلحہ رکیں تو ان کیلئے قانون نہیں کیا یہ سرکاری زمینوں پر قبضہ کریں ان کیلئے کوئی قانون نہیں کیا سردار اور جاگیردار غیر قانونی رائفل شوٹنگ اپنی جاگیروں میں کرکے علاقے کے لوگوں کو حراساں کریں ان کے خلاف کوئی ایکشن نہیں چیف جسٹس صاحب کہاں سویا ہوا ہے عدلیہ کیوں خاموش ہے پاکستان کہ بالاتر ادارے کہاں ہے سندھ عوام نے روزنامہ گلوبل ٹائمز یورپ اخبار کے ساتھ ایک اخباری بیان میں کہا کہ پاکستان کے تمام اداروں کو یہ بتانہ چاہتے ہیں کے تہرے قتل/ام رباب کیس کے مرکزی کردار ادا کرنے والے ملزمان رکن سندھ اسمبلی برہان چانڈیو اپنے عبوری ضمانت کا ناجائز فائدہ اٹھا رہاے ہے حکومت وقت اور عدلیہ اس کو گرفتار کیا جائے اور سخت سے سخت سزا دی جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں