کھیل صرف ورزش نہیں بلکہ صحت مند زندگی کیلئے بہت مفید ہے,سعدیہ شیخ

Spread the love

کھیل نا صرف انسان کی ذاتی زندگی پر اثر انداز ہوتا ہے بلکہ ملک کی خوشحالی اور ترقی میں بھی ایک خاص حثیت رکھتا ہے۔بانی ویمن فٹبال کلب

سندھ(چیف اکرام الدین) گلوبل ٹائمز میڈیا رپورٹ کے مطابق سندھ سے تعلق رکھنے والی پاکستان کی پہلی ویمن فٹ بال کلب کی بانی سعدیہ شیخ نے کہا کہ کرونا وائرس عالمی وبا کی وجہ سے کھیل کے میدان بھی درھم برھم ہو گئے جو کھلاڑیوں کیلئے باعث نقصان ہے انہوں نے کہا کہ صحت مند زندگی کیلئے کھیل کھود میں حصہ لینا بہت ضروری ہے کیونکہ کھیل کھیلنے اور ورزش کرنے سے انسان کی صحت میں بہت تبدیلیاں اسکتی ہے اور بہت سی بیماریوں سے انسان کو نجات مل سکتی ھے کھیل صحت مند زندگی کے حصول کیلئے نہایت اہم اور ضروری ہے کھیل یعنی کوئی بھی ایسا کام جو ہماری ذہنی اور جسمانی نشونما میں اہم کردار ادا کرے کھیل صرف تفریح کا ذریعہ ہی نہیں بلکہ جسم کو چاق و چوبند اور صحت مند بنانے کا بھی ذریعہ ہے انہوں نے کہا کہ کھیلنے سے دماغ تر وتازہ ہوتا ہے اور ایسی قائدانہ صلاحیتوں کو آبھارتا ہے جو کوئی اور چیز نہیں ابھار سکتی اگر کھیل نہ ہو تو ہمارا جسم بالکل لاغر و کمزور ہو جاتا ہے بہت سی بیماریاں اس کو گھیر لیتی ہیں اور وہ جلد بڑھاپے کی طرف بڑھنا شروع کر دیتا ہے اور اس کی خود اعتمادی لڑکھڑانے لگتی ہے کھیل خواہ کسی بھی قسم کے ہوں ہر طرح سے انسانی نشونما پر اثر ڈالتے ہیں کھیل کی اہمیت کو مد نظر رکھتے ہوئے تعلیمی اداروں نے بھی اس میدان میں قدم رکھ دیا ہے اس لیے اب اسکول میں جب بچہ پہلا قدم رکھتا ہے تو اسے تعلیم کے ساتھ ہی کھیل کی طرف بھی متوجہ کرایا جاتا ہے جسے اسکول لیول پر غیر نصابی سرگرمیوں کے نام سے متعارف کروایا گیا ہے تا کہ بچہ شروع سے ہی چست اور توانا ہو اور تعلیم پر بھی خوشی سے توجہ دے جبکہ کالج اور یونیورسٹی لیول پر اسے باقائدہ ایک مضمون فزیکل ایجوکیشن کے نام سے متعارف کروایا گیا ہے جس میں کھیل میں دلچسپی لینے والے طلباء داخلہ لے کر اس شعبے میں اپنا مقام بنا سکتے ہیں ویمن فٹ بال کی بانی سعدیہ شیخ نے بین الاقوامی گلوبل ٹائمز میڈیا یورپ کے ساتھ ایک اخباری میں کہا کہ کھیل نوجوان نسل کیلئے بہت اہم اور ضروری ہے کیونکہ کھیل صرف ورزش نہیں بلکہ صحت مند زندگی کیلئے بہت مفید ہے نوجوان نسل کو چاہئے کہ کھیل کے شعبے سے وابستہ ہو کر صحت مند زندگی بنا دیں اور ملک و قوم کی ترقی میں کردار ادا کریں تا کہ پاکستان ایک ترقی یافتہ ملک بن سکے اس لئے کھیلوں کی اہمیت نہ صرف طلباء اور جوانوں میں ناقابل تردید ہے بلکہ قوموں کی عظمت اور شناخت بھی کھیلوں سے منسلک ہے انہوں نے مزید کہا کہ کھیل نا صرف انسان کی ذاتی زندگی پر اثر انداز ہوتا ہے بلکہ ملک کی خوشحالی اور ترقی میں بھی ایک خاص حثیت رکھتا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں