ضمنی انتخابات میں پاکستان تحریک انصاف اور اس کے نظریہ کو نہیں خان صاحب کے غلط فیصلوں کو شکست ہوئی مرزا سعید محمود جہلمی

Spread the love

جہلم چوہدری زاہد حیات
ضمنی انتخابات میں پاکستان تحریک انصاف نہیں ہاری نا پاکستان تحریک انصاف کا نظریہ ہارا ہے بلکہ اصل میں ہار خان صاحب کے غلط فیصلوں اور الیکٹبلز کی ہوئی ہے یہ بات جہلم کی معروف سیاسی وسماجی شخصیت بابائے صحافت مرژا سعید محمود جہلمی نے ایک خصوصی ٹ میں کہی ہے ان کا کہنا تھا کہ آج بھی عوام کا سب سے زیادہ اعتماد اور بھروسہ خان صاحب ہر ہے لیکن پارٹی پالیسیاں اور خان صاحب کی ورکرز سے دوری اور غلط فیصلوں نے پاکستان تحریک انصاف کے نظریاتی ورکرز کو مایوس کیا ہے پاکستان تحریک انصاف کے ورکرز اور عمران خان کے درمیان فاصلے جان بوجھ کر بڑھا دیے گئے ہیں جس کی وجہ سے پاکستان تحریک انصاف کا ورکر عملاً پارٹی معاملات سے لاتعلق ہو گیا ہے مرزا سعید محمود جہلمی کا کہنا تھا کہ وہ پارٹی ورکرز جنہوں نے اپوزیشن میں خان کا صاحب کا ڈٹ کا ساتھ دیا اور پاکستان تحریک انصاف کے ننھے پودے کو تناور درخت بنانے میں مدد دی وہ آج پارٹی قیادت کی پالیسوں سے نالاں ہو چکے ہیں اور پاکستان تحریک انصاف جس نظریے پر وجود میں آئی وہ نظریہ دفن ہو چکا مرزا سعید محمود جہلمی کا کہناہے کہ پاکستان تحریک انصاف بھی اب روایتی سیاسی پارٹی بن چکی جو جاگیر داروں اور ارب پتی لوگوں کے ہاتھوں ہر غمال بنی ہوئی تبدیلی کا نعرہ بہت کمزور پڑھ چکا مرزا سعید محمود جہلمی کا کا کہنا تھا کہ اگر پاکستان تحریک انصاف کے حقیقی کارکنوں کو نظر انداز کرنے کی پالیسی جاری رہی تو آنے والے انتخابات میں پاکستان تحریک انصاف کو سیاسی طور پر نا قابل تلافی نقصان ہو گا اور اس وقت یہ الیکٹبلز سب سے پہلے پارٹی چھوڑیں گے ان کا کہنا تھا کہ پارٹی قیادت کو یہ بات یاد رکھنی چاہئے کہ نظریاتی ورکرز ہی کسی پارٹی کا قیمتی اثاثہ ہوتے کارکنوں کو نظر انداز کرنے کی روش کا نتیجہ پاکستان تحریک انصاف ضمنی انتخابات کے نتائج میں دیکھ چکی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں