پاک افغان شاہراہ پر قوم شینواری خوگاخیل کا اپنے مطالبات کے حق میں احتجاجی مظاہرہ

Spread the love

لنڈی کوتل ۔ پاک افغان شاہراہ پر قوم شینواری خوگاخیل کا اپنے مطالبات کے حق میں احتجاجی مظاہرہ کل تیسرے روز بھی جاری رہا ۔مظاہرین نے لنڈی کوتل بازار باچاخان چوک سے لنڈی کوتل بائی پاس تک احتجاجی مارچ کیا کیاگیا اور پاک افغان شاہراہ کو مکمل طور پر آمدورفت کیلئے بند کردیا ۔مظاہرین نے گو NLC گو اور گو FBRگو کے نعرے لگائیں ۔ مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے مفتی اعجاز شینواری، شاہ حسین شینواری، ملک لطف اللہ ، عبدالرازق شینواری، معراج الدین ، زرنور افریدی و دیگر نے کہا کہ طورخم قومی ملکیت ہے اس پر ناجائز قبضہ ہمیں ہر گز قابل قبول نہیں ہم اپنا حق چھین کے رہینگے انہوں نے کہا کہ ریاستی ادارے اپنا کردار ادا کرکے قوم کو جائز حقوق فراہم کریں انہوں نے کہا کہ قوم اب حق کے بھیک مانگ رہے ہیں لیکن این ایل سی غیر سنجیدگی سے کام لے رہے ہیں انکا کہنا تھا کہ NLC معاہدے کی پاسداری کرے اور قوم کے ساتھ کئے گئیں معاہدے کو تحریری شکل دے ساتھ ہی اعلیٰ سطح پر ٹیبل ٹاک کیلئے سازگار ماحول فراہم کرے انکا کہنا تھا کہ پردے کے پیچھے اہم ذمہ داران و افسران قوم کے ساتھ برائے راست مذاکرات کریں یہ مسئلہ ڈی پی او اور اسسٹنٹ کمشنر کی بس کی بات نہیں انٹرنیشنل ٹرمینل قیام اور قوم کی مستقبل کی بات ہے اس مسئلہ کے حل کیلئے حکومت کو چاہئے کہ فیڈرل لیول پر اعلیٰ سطح پر ایک مخصوص کمیٹی بنائے جائیں انکا کہنا تھا کہ مذاکرات کے دروازیں کھلے ہیں لیکن مذکرات ان کے ساتھ ہونا چاہئے جس کے ساتھ اختیارت بھی ہو شاہ حسین شینواری نے کہا کہ قوم اب بیدار ہے حقوق کی آئینی و قانونی جنگ لڑنے نکلیں ہے انکا کہنا تھا اب مزید ظلم و بربریت نہیں چلے گی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں