جیکب آباد میں نئی حلقہ بندیوں پر جماعت اسلامی کو بھی شدید تحفظات

Spread the love

جیکب آباد(نامہ نگار) جیکب آباد میں نئی حلقہ بندیوں پر جماعت اسلامی کو بھی شدید تحفظات، پی پی عوام سے خوفزدہ ہے 14سالہ دور اقتدار میں کچھ نہ کر نے کی وجہ سے حلقہ بندیوں میں غیر منصفانہ تبدیلی کی گئی ہے:عبدالحفیظ بجارانی کی پریس کانفرنس۔ تفصیلات کے مطابق جیکب آباد میں نئی حلقہ بندیوں پر جماعت اسلامی نے بھی شدید تحفظات کا اظہار کیا ہے جماعت اسلامی سندھ کے ڈپٹی جنرل سیکریٹری سندھ عبدالحفیظ بجارانی نے جیکب آباد میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ جیکب آباد میں ناقص اور زمینی حقائق کے برعکس حلقہ بندی کی گئی ہے جس سے عوام ناخوش ہیں ایک یوسی کو دوسری یوسی سے بدنیتی کرکے ملایا گیا ہے بختیارپور یوسی کو دیھ شجراع بھی دی گئی ہے جو کہ دس کلو میٹر دور ہے ایک علاقے کو دوسرے علاقے سے غلط طریقے سے ملایا گیا ہے آبادی بڑی ہے تو یونین کونسل کی تعداد بڑھائی جاتی، عبدالحفیظ بجارانی کا مزید کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی عوام سے خوفزدہ ہے 14سالہ دور اقتدار میں ناقص کارکردگی کی وجہ سے عوام نالاں ہیں پی پی نے عوام کی بھلائی کے لئے کوئی کام نہیں کیا ہسپتال، اسکول، روڈ راستوں کی سہولت سے عوام محروم ہیں پی پی نے کرپشن اور رشوت خوری کے سواء کچھ نہیں کیا، پی پی کے حکمرانوں کو پتہ ہے کہ عوام اب انہیں ووٹ نہیں دیں گے اس لئے حلقہ بندی میں کرپشن کی گئی ہے، جماعت اسلامی مطالبہ کرتی ہے کہ الیکشن کمیشن جیکب آباد میں موجودہ حلقہ بندی پر نظر ثانی کرکے نئی حلقہ بندی کرائے اس حوالے سے عوامی اتحاد سمیت دیگر سے رابطہ کرکے بھرپور جدوجہد کی جائے گی، ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ سندھ کے حکمران عوام کے حقوق پر ڈاکہ ڈال کر لانگ مارچ کرنے نکلے ہیں، جیکب آباد میں نئی حلقہ بندی میں عوام کو سہولت دینے کے بجائے پریشان کیا گیا ہے عوام کو حق رائے دہی کے استعما ل میں سہولت اور آسانی دینے کے بجائے تنگ کیا جا رہا ہے جو کسی صورت قبول نہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں