صحافی عبدالرزاق کھرل نے ہمیشہ حق اور سچ کا علم بلند کیا

Spread the love

جیکب آباد(نامہ نگار) صحافی عبدالرزاق کھرل نے ہمیشہ حق اور سچ کا علم بلند کیا، صحافت کے لیے ان کی خدمات کو کبھی فراموش نہیں کیا جاسکتا مرحوم عبدالرزاق کھرل اپنے مثالی کردار کی وجہ سے آج بھی ہمارے دلوں میں زندہ ہیں۔ان خیالات کا جیکب آباد کی سیاسی، سماجی، دینی تنظیموں کے رہنماؤں اور صحافیوں نے مرحوم صحافی عبدالرزاق کھرل کی چھٹی برسی کے موقع پر منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔سینئر صحافی عبدالرزاق کھرل یادگار کمیٹی کی جانب سے مرحوم عبدالرزاق کھرل کی چھٹی برسی پریس کلب جیکب آباد میں منائی گئی جس میں سیاسی، سماجی، دینی تنظیموں کے رہنماؤں اور شہروں نے کیثر تعداد میں شرکت کی، برسی کے موقع پر مرحوم کی روح کو ایصال ثواب اور درجات کی بلندی کے لیے فاتحہ خوانی کی گئی۔ اس موقع پر تقریب سے سماجی رہنما حاجی شیر محمد مغیری، جماعت اسلامی کے دیدار لاشاری، اتحاد اہل سنت کے سید اعجاز شاہ بخاری، علی محمد عوامی پارٹی کے دلمراد لاشاری، مہران سوشل فورم کے ایڈوکیٹ عبدالحئی سومرو، پریس کلب کے صدر بابو حیدر مگسی، سینئر صحافی محمد نواز سولنگی، سید مظہر شاہ نقوی، زاہد علی کھرل اور دیگر نے خطاب کرتے ہوئے مرحوم عبدالرزاق کھرل کی صحافتی میدان میں اعلیٰ خدمات کو سراہا اور کہا کہ صحافی عبدالرزاق کھرل مرحوم ایک ہمہ جہت شخصیت کا نام تھا جنہوں نے شاندار صحافت کو فروغ دینے میں فعال کردار ادا کیا، مرحوم نہایت بااخلاق، ملنسار، انسان دوست، سچے محب وطن اور بے شمار خداداد صلاحیتوں سے مالا مال شخصیت کے مالک انسان تھے ان کی شاندار صحافتی خدمات کو بھی ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔ اس موقع پر عبدالرزاق کھرل یادگار کمیٹی کی جانب سے مختلف شعبوں میں بہتر کارکردگی دکھانے پر سماجی رہنما حاجی شیر محمد مغیری، صحافی زاہد حسین رند، حیدر مگسی، محمد موسیٰ بلوچ، محمد نواز سولنگی، محمد علی میرالی، اسد مغل، سید آفتاب شاہ، برکت کھوکھر، عبدالحمید گوندل، استاد جاوید کلوڑ، دلمراد لاشاری، سید اعجازعلی شاہ، دیدارعلی لاشاری، منصب شیخ، سمیع اللہ سرھیو، عبدالحئی سومرو، جنید قادری، محمد اویس قادری، سجاد علی گھنیو، قمر بانو کو ایوارڈ اور تعریفی اسناددئیے گئے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں