دریائے جہلم میں وکٹوریہ پل کے مقام پر ریسکیو 1122 کا موک ایکسرسائز کامظاھرھ

Spread the love


پی ڈی ایم سے سمیت ضلع جہلم کے تمام ریسکیو اداروں نے اپنے اپنے کیمپ لگاکر صلاحیت کا مظاہرہ کیا

چوہدری زاہد حیات
جہلم محکمہ موسمیات کی طرف سے آنے والے مون سون سپل میں معمول سے زیادہ بارشوں کی پیشنگوئی کے پیش نظر دریائے جہلم کے کنارے پر سو کلومیٹر لمبی پٹی پر رہائش پذیر آبادیوں اور بیلا کے مکینوں کو کسی بھی ناگہانی صورتحال کے پیش نظر امداد پہنچانے اور ریسکیو کرنے کے لیے پی ڈی ایم اے اورریسکیو1122 سمیت ضلع جہلم کے تمام اداروں نے اپنی صلاحیتوں کو جانچنے کے لئے دریائے جہلم پر وکٹوریہ برج کے مقام پر کیمپ لگا کر اپنی صلاحیتوں کا مظاہرہ کیا
ممکنہ سیلاب سیلاب کے پیش نظر ہر علاقائی مکینوں کو سیلاب کی تباہ کاریوں سے بچانے کے لیے مختلف مشقیں کیں جن میں ڈوبتے ہوئے افراد کو ریسکیو کر کے کنارے تک لاکر ان کو ابتدائی طبی امداد کے بعد قریبی اسپتال پہنچانا ریسکیو کال موصول ہونے کے بعد متاثرہ افراد تک کم از کم وقت کے اندر پہنچ کر ان کو موقع پر ریلیف دینے کے بعد بعد محفوظ جگہوں پر منتقل کرنا سمیت دیگر مشقوں کا مظاہرہ بھی شامل تھا جسے دیکھنے کے لیے آنے والے افراد ریسکیو ڈبل ون ڈبل ٹو کی صلاحیتوں پر اعتماد کرتے ہوئے خوب داد دی اس موقع پر پی ڈی ایم اے کے ڈی ڈی ایم سی آفیسر محمد صبور نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا پی ڈی ایم این اے پنجاب کے 36 اضلاع میں ہنگامی سینٹر قائم کیے ہیں ہیلتھ کی طرف سے ڈی ڈی ایچ او محمد علی ملک نے کہا کہ سیلاب کو فیس کرنا ہمارے لیے کوئی نئی بات نہیں ہر سال اگست ستمبر سے آنے سے پہلے پہلے ہم اپنی ھیلتھ کی امدادی ٹیموں کی تشکیل دیتے ہیں جو کہ ہر جگہ اور ہر موقعے پر موجود ہو کر اپنے ہونے کا یقین دلاتی ہیں دیگر اداروں کے ساتھ ساتھ اپنا کردار احسن طریقے سے نبھاتی ہیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں