قوم کے سرکردہ مشران کے ساتھ FIAکے اہلکاروں کے غیرذمہ دارانہ رویہ اور نامناسب الفاظ کی استعمال کیخلاف لنڈی کوتل پریس کلب میں پر ہجوم پریس کانفرنس

Spread the love

لنڈی کوتل
قوم کے سرکردہ مشران کے ساتھ FIAکے اہلکاروں کے غیرذمہ دارانہ رویہ اور نامناسب الفاظ کی استعمال کیخلاف لنڈی کوتل پریس کلب میں پر ہجوم پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے برکت شینواری، جماعت اسلامی کے مقتدر آفریدی، کلیم اللہ شینواری سابق امیدوار تحصیل چیئرمین شپ، سمیع اللہ آفریدی و دیگر ساتھیوں نے کہا کہ پاک افغان طورخم بارڈر پر ایف آئی اے کے اہلکاروں کا قومی مشران کے ساتھ بدتمیزی اور غیر ذمہ دارانہ سلوک قابل مذمت اور ناقابل برداشت ہے انہوں نے کہا کہ پاک افغان طورخم بارڈر پر گزشتہ بیس دن سے افعانی باشندے پھنسے ہوئے ہیں جن کے ساتھ تزکرہ موجود ہیں لیکن ان کو بغیر ویزہ اجازت نہیں دی جاتی ان کے حوالے سے ایک وفد ایف آئی اے کے ساتھ اس مسئلے پر بات چیت کرنے گئے وہاں ڈیوٹی پر موجود اہلکاروں نے انتہائی بدسلوکی سے وفد کے مشران کو واپس کرتے ہوئے کہا کہ کا یہاں آپ کو شکایت، درخواست اور مطالبہ حتی کہ بات کرنے کی اجازت نہیں ہوگی وفد نے انہیں سمجھانے کی کوشش کی لیکن ان اہلکاروں نے ان کو کہا کہ یہاں پر شینواری آفریدی نہیں چلے گی جاو آپ کے مشران نے یہ طورخم کے اراضی فروخت کیا ہے جس پر وفد میں موجود برکت شینواری، نجیب ، نعمت اللہ و دیگر نے ان کے ساتھ قانون کے عین مطابق بحث کی جس پر وہ نالاں ہوئے انہوں نے کہا کہ جب وفد واپس مزدوروں کی احتجاجی پنڈال پہنچ گئے وہاں پر مزدور اور قومی مشران نے فوری طور پر ہنگامی پریس کانفرنس کا فیصلہ کیا اور پریس کانفرنس میں مختلف مکاتب فکر کے سرکردہ سیاسی مشران نے شرکت کی اور ایف آئی اے کے اہلکاروں کی بدتمیزی کی شدید مذمت کرتے ہوئے اعلیٰ حکام سے اس واقعہ کا نوٹس لینے اور ملوث اہلکاروں کے خلاف کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا بصورت دیگر پاک افغان شاہراہ ہر قسم آمدورفت کیلئے احتجاجاً بند

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں