پاکستان میں کرونا سے بگڑتی صورتحال پاکستان دنیا بھر میں متاثرہ ممالک کی فہرست میں پندرھویں نمبر پر پہنچ گیا ہے

Spread the love

زاہد حیات
پاکستان کرونا کیسز کا گراف مزید بلند ہونے کے بعد کیسز کی تعداد کے لحاظ 213 ممالک میں دنیا کا 15 واں ملک بن چکا ہے، اموات اور نئے کیسز کی تعداد میں ہر روز اضافہ ہو رہا ہے، گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران ملک میں مزید 88 اموات ہوئیں۔

تفصیلات کے مطابق گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں مزید 88 افراد کرونا انفیکشن کا شکار ہو کر جاں بحق ہو گئے جب کہ 6,472 نئے کیسز سامنے آئے۔ نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کی جانب سے جاری اَپ ڈیٹ کے مطابق نئے اور مہلک وائرس کو وِڈ نائنٹین سے پاکستان بھر میں 132,405 افراد متاثر ہو چکے ہیں، جب کہ اموات کی تعداد 2,551 ہو گئی ہے۔

پاکستان میں آبادی کے لحاظ سے کرونا وائرس سے متعلق اعداد و شمار کچھ یوں ہے کہ 10 لاکھ آبادی میں اموات کی شرح 10 سے بھی بڑھ کر 12 فی صد ہو گئی ہے، جب کہ 10 لاکھ آبادی میں کیسز کی تعداد بھی بڑھ کر 600 ہو گئی۔ کرونا وائرس کی تشخیص کے لیے کیے جانے والے ٹیسٹس کی شرح 10 لاکھ آبادی میں 3,802 ہے۔

پاکستان کے مختلف شہروں میں اس وقت کرونا کے زیر علاج مریضوں کی تعداد 79 ہزار 798 ہے، جب کہ اب تک 50,056 مریض وائرس سے لاحق ہونے والی بیماری سے شفا یاب ہو چکے ہیں

کمانڈ سینٹر کا کہنا ہے کہ سب زیادہ اموات پنجاب میں ہوئی ہیں جن کی تعداد 938 ہے، اس کے بعد سندھ میں 793 اموات، خیبر پختون خوا میں 642 اموات، بلوچستان میں 80، اسلام آباد میں 71، گلگت بلتستان میں 16 اموات جب کہ آزاد کشمیر میں 11 موت ریکارڈ ہوئی ہے۔

پنجاب میں کرونا کیسز کی تعداد سب سے زیادہ 50,087 ہو گئی، سندھ میں 49,256 کرونا کیسز رپورٹ ہو چکے ہیں، خیبر پختون خوا میں کیسز کی تعداد 16,415، بلوچستان میں 7,866، اسلام آباد میں 7,163 ہو گئی، گلگت بلتستان میں 1,044 کرونا کیسز رپورٹ ہوئے، آزاد کشمیر میں کیسز کی تعداد 574 ہے۔

گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک میں 29 ہزار 850 کرونا ٹیسٹ کیے گئے، این سی او سی کے مطابق ملک میں اب تک کرونا کے 8 لاکھ 39 ہزار 19 ٹیسٹ کیے جا چکے ہیں۔ سندھ میں 22,047 مریض صحت یاب ہوئے ہیں، پنجاب میں 9,546 مریض، خیبر پختون خوا میں 3,907 مریض، بلوچستان میں 2,673 مریض، اسلام آباد میں 1,164، گلگلت بلتستان میں 673 مریض، جب کہ آزاد جموں و کشمیر میں 237 مریض صحت یاب ہو چکے ہیں۔

Please follow and like us:

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں