دوہری شہریت والے شخص کو جج تعینات کرنے پر پابندی کا آئینی ترمیمی بل جمع۔

Spread the love

بل کے تحت دوہری شہریت کے حامل شخص کو سپریم کورٹ یا ہائیکورٹ کا جج تعینات کرنے پرپابندی ہوگی۔

اسلام آباد(نمائندہ جاوید اقبال)گلوبل ٹائمز میڈیا یورپ کے مطابق دوہری شہریت والے شخص کو جج تعینات کرنے  پر  پابندی کا  آئینی ترمیمی بل قومی اسمبلی میں جمع کروادیا گیا۔جمعیت علماء اسلام (ف) کے رکن نور عالم خان نے نجی آئینی ترمیمی بل قومی اسمبلی سیکرٹریٹ میں جمع کروایا۔بل کے تحت دوہری شہریت کے حامل شخص کو سپریم کورٹ یا ہائیکورٹ کا جج تعینات کرنے پر پابندی ہوگی،بل میں آئین کے آرٹیکل 177، 193 اور 208 میں ترامیم تجویز کی گئی ہیں۔بل کے مطابق دوہری شہریت کا حامل شخص سپریم کورٹ اور ہائیکورٹ کا جج تعینات نہیں ہوگا، دوہری شہریت والے عدالتوں کے افسران اور ملازمین  بھی تعینات نہیں ہو سکیں گے۔بل کے متن کے مطابق جن ججز کی دوہری شہریت ہو وہ اپنے اصل ملک کے مفاد کو داؤ پر لگاتے ہیں، آئین کے تحت ججز کی ریاست سے وفاداری کو یقینی بنانے کی ضرورت ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں