نان بائیوں نے روٹی،نان کا وزن اور معیارانتہائی کم کر کے قیمتوں میں خود ساختہ اضافہ کر دیا،

Spread the love

جہلم(چوہدری عابد محمود +مرزاکفیل بیگ کیفی)جہلم ضلعی انتظامیہ وپرائس کنٹرول مجسٹریٹوں کی پراسرار خاموشی، پرائس کنٹرول مجسٹریٹس کی مبینہ ملی بھگت سے جہلم شہر و مضافاتی علاقوں کے نان بائیوں نے روٹی،نان کا وزن اور معیارانتہائی کم کر کے قیمتوں میں خود ساختہ اضافہ کر دیا، رواں سال کے دوران ایک بار پھر روٹی، نان، روغنی نان اور تندوری پراٹھے کی قیمتوں میں اضافہ کر دیا گیا، غریب سفید پوش طبقہ پریشان، شہریوں کا ڈپٹی کمشنر سے نوٹس لینے کا مطالبہ، تفصیلات کے مطابق شہر و گردونواح کے علاقوں میں نان بائیوں نے حکومتی نرخوں کو پس پشت ڈالتے ہوئے خود ساختہ نرخ مقرر کرکے مختلف اقسام کی روٹی 7روپے سے بڑھا کر 10روپے میں فروخت شروع کر دی ہے، جبکہ نان کی قیمت 10 روپے سے بڑھا کر 15 روپے وصول کرنی شروع کر رکھی ہے، قابل زکر بات یہ ہے کہ پرائس کنٹرول مجسٹریٹس نان بائیوں کے خلاف کارروائیاں کرنے سے گریزاں ہیں جس کیوجہ سے نان بائیوں نے حکومتی نرخ نامے کو پس پشت ڈالتے ہوئے روٹی کی قیمت 10 روپے اور نان کی قیمت 15 روپے وصول کرنی شروع کر رکھی ہے، شہریوں کا کہنا ہے کہ حکومت ہر محاذ پر بری طرح ناکام دکھائی دیتی ہے، نان بائیوں نے بھی ضلعی انتظامیہ کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر من مرضی کے نرخ وصول کرنے شروع کر رکھے ہیں جس کیوجہ سے غریب سفید پوش طبقہ شدید متاثر ہو رہاہے۔ شہریوں نے وزیر اعظم پاکستان، وزیر اعلیٰ پنجاب، چیف سیکرٹری لاہور، کمشنر راولپنڈی، ڈپٹی کمشنر جہلم سے گراں فروشی کے مرتکب نان بائیوں کے خلاف فوجداری مقدمات اور بھاری جرمانے کرنے کا مطالبہ کیاہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں