بجلی، ٹیلیفون، گیس کے بلز بروقت نہ ملنے کی وجہ سے صارفین وفاقی اداروں کے خلاف سراپا احتجاج،

Spread the love

جہلم(چوہدری عابد محمود +سید مظہر عباس)بجلی، ٹیلیفون، گیس کے بلز بروقت نہ ملنے کی وجہ سے صارفین وفاقی اداروں کے خلاف سراپا احتجاج، سرکاری محکموں نے پاکستان پوسٹ کے ذریعے بل تقسیم کروانے کی بجائے نجی کورئیر کمپنیوں سے معاہدے کر لئے، شہریوں کی مشکلات میں اضافہ، شہریوں کا ارباب اختیار سے نوٹس لینے کا مطالبہ، تفصیلات کے مطابق پی ٹی سی ایل، آئیسکو واپڈا، سوئی نادرن گیس کے بلز تاخیر سے ملنے کی وجہ سے شہریوں کو مقررہ تاریخوں کے بعد ملنے والے بلوں پر اضافی چارجز ادا کرنا پڑتے ہیں جبکہ متعلقہ اداروں نے یوٹیلیٹی بلز پوسٹ آفس کے زریعے بھجوانے کی بجائے نجی کورئیر کمپنیوں کے ساتھ گٹھ جوڑ کرکے شہریوں کی مشکلات میں اضافہ کر رکھا ہے، کوریئر کمپنیوں کے اہلکار کئی کئی روز تک یوٹیلیٹی بلز اپنے دفتروں میں پھینک کر مقررہ تاریخیں آنے کا انتظار کرتے ہیں، جونہی مقررہ تاریخ گزرجائے تو یوٹیلیٹی بلز دکانوں، گھروں کے دروازوں پر بلا دستک دیئے پھینک کر رفو چکر ہو جاتے ہیں، بعض اوقات پھینکے گئے بل نہ ملنے کی وجہ سے شہریوں کو 2,2 ماہ کا بل یکمشت اضافی چارجزکے ساتھ ادا کرنا پڑتے ہیں، شہریوں نے وزیر اعظم پاکستان عمران خان، چیف جسٹس آف پاکستان سے مطالبہ کیاہے کہ نجی کورئیر کمپنیوں کے ساتھ کئے گئے معاہدے منسوخ کرکے پاکستان پوسٹ جو کہ وفاقی ادارہ ہے کو بل تقسیم کرنے کا پابند بنایاجا ئے تاکہ خسارے میں جانے والے سرکاری ادارے معاشی بدحالی سے نکل کر ترقی کی جانب گامزن ہو سکیں اور شہری بروقت بلوں کی ادائیگی کرکے اضافی چارجز سے بچ سکیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں