جامع مسجد فیضانِ حسینؓ کے سنگِ بنیاد کے سلسلہ میں دعاٸیہ تقریب کا اہتممام

Spread the love

(اوچشریف سے نماٸندہ خصوصی کی رپورٹ)
گذشتہ دن پُل حسینی چوک محلہ اوچ گیلانی اچشریف میں جامع مسجد فیضانِ حسینؓ کے سنگِ بنیاد کی دعاٸیہ تقریب میں مفکرِ اسلام علامہ صاحبزادہ سید حامد سعید کاظمی شاہ صاحب (سابق وفاقی وزیر براٸے مذہبی امور) و مخدوم پیر سید سہیل حسن گیلانی شاہ صاحب (چٸیرمین مشاٸخ اتحاد کونسل پاکستان) علامہ عبدالغفار سعیدی،علامہ مفتی احتشامُ الحق فیضی اور دیگر کثیر تعداد میں علما کرام نے خصوصی خطابات کٸیے۔
علما کرام نے بیان کرتے ہوٸے کہ دنیا میں حسبِ توفیق مسلمان بہت سارے نیک کام کرتے ہیں، لیکن ان نیک کاموں میں سے بعض کاموں کا اجر و ثواب صرف دنیا کی زندگی تک رہتا ہے اور بعض نیک کاموں کا اجر و ثواب مرنے کے بعد بھی انسان کو ملتا رہتا ہے۔ ان نیک کاموں میں سے ایک بہترین نیک کام مسجد تعمیر کرنا ہے ۔ جامع مسجد فیضانِ حسینؓ کے افتتاح کے موقع پر ان خیالات کا اظہار کیا اور مزید بیان کرتے ہوٸے کہا کہ مسجد کی تعمیر بہترین صدقہ جاریہ ہے ، اس لئے کہ مساجد قیامت تک باقی رہنے والی ہوتی ہیں اور جب تک لوگ مسجد میں نمازیں پڑھتے رہیں گے اس کا اجر و ثواب مسجد تعمیر کرنے والوں کے حق میں لکھا جاتا رہے گا۔

علما کرام نے مسجد کے بانی و صدر علامہ محمداحمد سعیدی کے جذبے کو سراہتے ہوٸے علامہ صاحب کو خراجِ تحسین پیش کیا اور مبارکبادیں پیش کیں۔ اور مسلمان بھائیوں کو زور دے کر کہا کہ وہ نمازوں کی پابندی کریں اور اس مسجد کو جلد پایہ تکمیل تک پہنچاٸیں اللہ کا گھر آباد کریں اللہ پاک تمہارے گھروں کو آباد کرے گا۔ اس موقع پر پیر سید مخدوم سہیل حسن گیلانی، سید محمد طارق بخاری، علامہ عبدالستار سعیدی،علامہ قاری ریاض احمد سعیدی، علامہ ذوالفقار احمد سعیدی، علامہ قاری برکت علی چشتی ،علامہ قاری وقاص احمد سعیدی، مفتی عبدالغفور چشتی، قاری محمد اسلم سعیدی، قاری محمد آصف فرید سعیدی، علامہ عبدالرحمٰن سیفی،
پروفیسر اظہر عطاری، جماعتِ اہلسنت اوچشریف اور انجمن طلبا اسلام کے قاٸدین اور
دیگر مقامی ذمہ دار احباب بھی جامع مسجد فیضانِ حسینؓ کی افتتاحی تقریب میں شریک تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں