جہلم ریلوے کالونی میں موجودکھنڈرات نما کوارٹروں میں رہنے والے درجہ چہارم کے ملازمین پھٹ پڑے،

Spread the love

جہلم(چوہدری عابد محمود +عبدالغفارآذاد)جہلم ریلوے کالونی میں موجودکھنڈرات نما کوارٹروں میں رہنے والے درجہ چہارم کے ملازمین پھٹ پڑے، ریلوے کے منہدم ہوتی ہوئی کالونی کے بوسیدہ کو ارٹروں میں رہائش پذیر ملازمین اپنی تنخواہ سے ماہانہ ہاؤس رینٹ تنخواہوں سے ادا کردیتے ہیں جس کا طے شدہ معاہدے کے مطابق ریلوے انتظامیہ نے ہر سال سرکاری کوارٹروں کی مرمت کروانا ہوتی ہے، محکمہ ریلوے کی جانب سے مرمت کے فنڈز جاری نہ ہونے کے باعث جہلم ریلوے کالونی موہنجوداڑو کی منظر کشی کر رہی ہے، دیواروں اور چھتوں کی خستہ حالی قابل دیدنی ہے ارباب اختیار نے ریلوے اسٹیشن جہلم سے ملحقہ ریلوے کالونی سے لا تعلقی اختیار کر لی ہے جس کی وجہ سے ریلوے کالونی میں مقیم ملازمین کے سروں پر خوف کے سائے منڈلاتے رہتے ہیں، اس حوالے سے ریلوے کالونی کے مکینوں کا کہنا ہے کہ ریلوے انتظامیہ کو ہمارے بچوں پر ترس اانا چاہیے اور سرکاری کوارٹروں کی سالانہ مرمت اور دیکھ بھال کرنی چاہیے تاکہ ہمارے بیوی بچے محفوظ طریقے سے زندگی بسر کر سکیں۔

Please follow and like us:

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں