عبادتگاہ کی اراضی پر قبضہ کی کوشش ناکام

Spread the love

وزیرآباد (طارق ملک بیورو چیف ) عبادتگاہ کی اراضی پر قبضہ کی کوشش ناکام بنا دی گئی مسلح افراد نے اراضی پر قبضہ کے لیے دھاوا بول دیا. حملہ آوروں کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا. جمعیت العلماء پاکستان کے مرکزی نائب صدر محمد عارف ھزاروی، پروفیسر ڈاکٹر محمد آصف ھزاروی.بزم غوثیہ کے ناظم اعلی محمد یوسف چاند. جماعت اہلسنت کے ڈویژنل نائب امیر قاری سعید احمد ارشد.. نے دیگر علماء و عمائدین کے ھمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ھوے کہا کہ 36 کنال سے زائد اراضی اہلسنت والجماعت حنفی بریلوی مسلک کی مرکزی عید گاہ بھٹی کی کے نام 1866ء سے وقف ھے.جس میں 9 کنال پر عید گاہ اور مدرسہ جات تعمیر کیے گئے ھیں اور باقی اراضی چار دیواری میں واقع ھے.مدرسہ جات میں 300 طلباء و طالبات زہر تعلیم ھیں.دو روز قبل فرقہ جعفریہ کے با اثر افراد عاطف الطاف.ذوالفقار اور ظہور حسین نے سو سے زائد مسلح افراد کے ھمراہ عبادتگاہ کی اراضی پر قبضہ کے لیے ٹریکٹروں کی مدد سے دھاوا بول دیا اور دیوار مسمار کر دی.اہل دیھہ کی مداخلت پر ملزمان موقع سے فرار ہو گئے.ملزمان کے خلاف حاجی محمد یعقوب منتظم کی مدعیت میں مقدمہ درج کر لیا گیا ھے. علامہ محمد عارف ھزاروی نے کہا ھے کے ملزمان نے محکمہ مال کے اہلکاروں کی ملی بھگت سے گزشتہ سال کی گرداوری جحلسازی سے اپنے نام کرائ ھے جبکہ گزشتہ سو سال سے زاید عرصہ سے مذکورہ اراضی مرکزی عید گاہ اہلسنت کی ملکیت اور زیر قبضہ ھے. جبکہ گزشتہ روز ملزمان نے اپنے ھم مسلک علاقہ ایس ایچ او کی سرپرستی اور ملی بھگت سے اہلسنت کی عید گاہ کی اراضی پر قبضہ کی مذموم کوشش کی ھے.عید گاہ کی انتظامی کمیٹی کے ممبران ڈاکٹر محمد فاروق اور ڈاکٹر عدنان ملک نے کہا کہ گزشتہ طویل عرصہ سے حاجی محمد یعقوب کی زیر نگرانی مدرسہ غوثیہ کنزالعلوم میں سینکڑوں طلباء و طالبات دینی تعلیم حاصل کر رھے ھیں اور مخالف فرقہ کے با اثر شر پسند عناصر نے اہلسنت کی مرکزی عبادتگاہ کی اراضی پر قبضہ کی کوشش کر کے فرقہ واریت کو ھوا دینے کی مذموم کوشش کی ھے علامہ محمد عارف ھزاروی نے مطالبہ کیا کہ فرقہ واریت پھیلانے کے گھناؤنے منصوببے میں ملوث SHo تھانہ صدر وزیرآباد کو فی الفور تبدیل کر کے کاروائی کرنے کے علاوہ جحلسازی میں ملوث محکمہ مال کے اہلکاروں کو برطرف کیا جائے .یہ امر قابل ذکر ھے کہ ملزموں نے عبوری ضمانت کرا لی ھے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں