بلاجواز و غیر قانونی جرمانہ صرف جیب بھرنے کا بہانہ

Spread the love

بلاجواز و غیر قانونی جرمانہ صرف جیب بھرنے کا بہانہ ہے۔ اے سی بازار کے مسائل پر خاموش اور جیب بھرنے کے لئے خوب سرگرام ہے اگر قبلہ درست نہیں کیاگیا اور جرمانے کے نام پر دوکانداروں سے وصول کئے گئے روپے واپس نہیں کیاگیا تو ان کے خلاف لنڈی کوتل بازار میں دھرنا ہوگا جن کی ساری زمہ داری اے سی لنڈی کوتل محمد عمران پر ہوگی۔ ان خیالات کا اظہار انجمن تاجران لنڈی کوتل کے صدر جعفر علی شینواری نے تاجروں کے ہمراہ ڈسٹرکٹ پریس کلب لنڈی کوتل میں کیا انکا کہنا تھا کہ لنڈی کوتل بازار سے روزانہ کے حساب سے نرخنامے کے نام پر ہزاروں روپے بھٹورنے میں مصروف عمل ہے جن کا مقصد کرپشن کرنا ہے جو نرخنامہ سال قبل بنایا ہوا ہے وہی نرخ نامے سے صرف فوٹوسٹیٹ کرکے بازار میں تقسیم کررہے ہیں لیکن بازار صفائی پر خاکروب کے خلاف کاروائی سے قاصر ہے انہوں نے کہا کہ اے سی لنڈی کوتل ایک غیر زمہ دار افیسر ہے ان کو جلد ازجلد تبدیل کیا جائے اور دو دن کے اندر غریب دوکانداروں کو من مانی کی جرمانہ بھی واپس دیا جائیں اور نیب ان کی تحقیقات بھی کرائیں ۔ بازار یونین کے صدر جعفر شینواری نے مزید کہا کہ اے سی محمد عمران بازار میں بے جا مداخلت کررہے ہیں جس کی وجہ سے دوکاندار سخت پریشانی میں مبتلا ہے کیونکہ وہ ہم سے مشورہ کئے بغیر پرانے نرخ ناموں جس کی صرف تاریخ بدلتے ہیں اور اس پرچی کے نام پر دوکانداروں سے پیسے جمع کرتے ہیں انہوں نے کہا کہ آج اے سی نے مختلف دوکانداروں کو بلا وجہ ہزاروں روپے غیر قانونی جرمانہ کیا ہے جو کہ ظلم ہے انہیں بازار کے پانی ,بجلی اور دیگر مسائل کے حل کیلئے اقدامات کرنی چاہیے نا کہ دوکانداروں کو بے جا تنگ کرنا اور انہیں ہزاروں روپے جرمانہ کرنا انہوں نے کہا کہ اے سی دو دن کے اندر اندر دوکانداروں کو جرمانہ واپس کرے اور بازار میں 22 خاکروب جو لاکھوں روپے ہر مہینے تنخواہ لیتے ہیں کو بر وقت حاضر کرے بصورت دیگر اے سی کے خلاف بازار کے ہزاروں دوکانداروں کے ساتھ ان کے خلاف دھرنا دینگے

Please follow and like us:

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں