جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کی بین الاقوامی ٹیم نے اکتوبر اور نومبر کے مہینے میں بین الاقوامی پارلیمنٹری کانفرنسز منعقد کرانے کا اعلان کر دیا

Spread the love

بریڈ فورڈ (عارف چودھری ) جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کی بین الاقوامی ٹیم نے اکتوبر اور نومبر کے مہینے میں بین الاقوامی پارلیمنٹری کانفرنسز منعقد کرانے کا اعلان کر دیا ،پارلیمنٹری کانفرنسز میں پاکستان ، آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان کی اسمبلیوں کے علاوہ برطانوی ، یورپین پارلیمنٹ کے ارکان اور انسانی حقوق کی تنظیموں کے مندوبین شریک ہوں گے ،جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے چیئرمین راجہ نجابت حسین نے تحریک کی آمدہ سرگرمیوں کا شیڈول جاری کردیا ، اس موقع پر گذشتہ ماہ پارلیمنٹری کانفرنسز کے حوالے سے تحریکی عہدیداران کے علاوہ برطانوی ، یورپین ، پاکستانی اور آزاد کشمیر کی پارلیمنٹ کے ارکان سے بھی مشاورت کی گئی، گورنر پنجاب چودھری محمد سرور ، برطانیہ میں پاکستانی ہائی کمشنر معظم احمد خان، برطانوی پارلیمنٹ میں کشمیر پارلیمنٹری گروپ کی چیئرپرسن ایم پی ڈیبی ابراھم ، شیڈو وزیر بیرسٹر یاسمین قریشی ایم پی چیئر پرسن پارلیمنٹری گروپ برائے پاکستان ،سابق ممبر یورپین پارلیمنٹ اینتھیا میکنٹائر،کنزرویٹو فرینڈز آف کشمیر کے شریک چیئرمین ایم پی پال برسٹو یک ،لیبر فرینڈز آف کشمیرایم پی اینڈریو گوون ، چیئرمین کامن ویلتھ ممالک ایم این اے شندانہ گلزار اور دیگر اہم رہنمائوں پارلیمنٹیرینز کے تعاون اور مشاورت سے کشمیر پر پارلیمنٹری کانفرنسز کا انعقا د کیا جائے گا،پہلی کانفرنس 14اکتوبر کو پارلیمنٹری کشمیر کانفرنس منعقد ہو گی ، جبکہ دوسری کانفرنس 24اکتوبر آزاد جموں و کشمیر ریاستی حکومت کے یوم تاسیس کے موقع پر کو مانچسٹر میں پروگرام منعقد کیا جائے گا جس میں طارق وزیر قونصل جنرل آف پاکستان ، شیڈو ڈپٹی لیڈر ایم پی افضل خان ، سابق ممبر یورپین پارلیمنٹ ،کنوینر لیبر فرینڈز آف کشمیرکونسلرواجد خان ، ممبر قومی اسمبلی پاکستان وممبر کشمیر کمیٹی نورین فاروق ابراہیم،شیڈو وزیر دفاع ایم پی خالد محمود ، ایم پی جیک برئیرٹن سمیت برطانیہ اور یورپ کے دیگر پارلیمنٹیرینزشریک ہوں گے، 27اکتوبر کو لندن میں برطانوی اور پاکستانی پارلیمنٹیرینز اور کشمیری تنظیموں کے ساتھمل کر ریاست جموں و کشمیر میں بھارتی افواج کے مظالم اور انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے خلاف بھرپو ر آواز اٹھائیںگے، یکم نومبر کو گلگت بلتستان کا یوم آزادی آزادکشمیر کے صدر سردار مسعود خان اور آزادکشمیر کے وزیر اعظم راجہ محمد فاروق حیدر خان اور پوری ریاست جموں سے تعلق رکھنے والے پاکستانی اور کشمیری پارلیمنٹیرینز اور سیاسی رہنمائوں کے ساتھ مل کر منایا جائے گا ،جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے زیر اہتمام 6نومبر یوم شہدائے جموںکے موقع پر سیالکوٹ /لاہور میں گورنر پنجاب چودھری محمد سرور اور یوتھ پارلیمنٹ آف پاکستان کے صدر عبیدالرحمن قریشی کے اشتراک سے منایا جائے گا،10 اور11نومبر کوانٹرنیشنل سائنس اینڈ ڈویلپمنٹ ڈے کے موقع پر میر پور یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی میں یونیورسٹی کے اشترا ک سے کانفرنس کا انعقاد کیا جائے گاجس میں آزادکشمیر کے صدر سردار مسعود خان اور وفاقی وزیر برائے سائنس و ٹکنالوجی چوہدری فواد حسین کی شرکت متوقع ہے، یونیورسٹی آزاد جموں و کشمیر کے تعاون نومبر کے تیسرے ہفتے میں مظفر آباد میں دو روزہ کانفرنس کا انعقاد کیا جائے گا جس میں افتتاحی خطاب آزادکشمیر کے صدر سردار مسعود خان جبکہ وزیر اعظم اختتامی خطاب کریں گے اس کے علاوہ پاکستانی اور کشمیری پارلیمنٹیرئینز کے علاوہ بین الاقوامی پارلیمنٹیرینز اور انسانی حقوق کے رہنماء بھی شریک ہوں گے،جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹرنیشنل کی ٹیم نے دنیا بھر میں پارلیمنٹیرینز ، سیاستدانوں اور انسانی حقوق کے کارکنوں کے ساتھ ساتھ پاکستان اور آزادکشمیر میں سرکاری اداروں کے ساتھ کوآرڈینیشن کا آغاز بھی کیا ہے، مظفرآباد میں دو روزہ کانفرنس میں پاکستانی وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی ، پاکستانی پارلیمنٹ کی چیئرمین قومی کشمیر کمیٹی شہریار خان آفریدی ایم این اے ، پاکستانی سینیٹ میں چیئرمین خارجہ امور کمیٹی سینیٹر مشاہد حسین سید ، چیئرمین پاکستان خارجہ امور کمیٹی برائے قومی اسمبلی احسن ٹوانا، ممبران قومی اسمبلی، آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان ، صوبائی اسمبلیوں کے ممبران اور دیگر اہم مقررین کو بھی مدعو کیا جائے گا،جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کی آمدہ سرگرمیوں کے لئے کام شروع کر دیا گیا ہے جس کے لئے تحریک کے چیئرمین راجہ نجابت حسین کے علاوہ ، سیکرٹری جنرلمحمد اعظم، تحریک حق خود ارادیت کے انٹرنیشنل کوآرڈینیٹرعبدالحمید لون ، عبیدالرحمن قریشی صدر یوتھ پارلیمنٹ آف پاکستان ، تحریک حق خود ارادیت آزادکشمیرکی چیئرپرسن ایم ایل اے سحرش قمر ،ایم این اے محترمہ نورین فاروق ابراہیم،اور دیگر کی معاونت سے ممبران اسمبلی ، اہم شخصیات ، مندوبین اور دیگرمعززین کو دعوت نامے ، ای میلزاور مراسلہ جات ارسال کردیئے گئے ہیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں