ملتان میں کسی بھی ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کے لئے ضلعی انتظامیہ نے تیاریاں مکمل کر لی

Spread the love

ملتان میں کسی بھی ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کے لئے ضلعی انتظامیہ نے تیاریاں مکمل کر لی ہیں اور ڈپٹی کمشنر عامر خٹک کی ہدایت پر ایمرجنسی پلان تیار کر لیا گیا ہے۔ضلعی انتظامیہ، پولیس اور مختلف محکموں کے افسران نے ذمہ داریاں سنبھال لی ہیں۔تمام محکموں کے افسران کو آئندہ
72 گھنٹوں تک ضلعی ہیڈ
کوارٹر نہ چھوڑنے کی ہدایت کر دی گئی ہے۔کسی بھی ایمر
جنسی سے نمٹنے کے لئے قلعہ کہنہ قاسم باغ کے ایریا میں 3 ہیلی پیڈ تیارکرلئے گئے ہیں۔ہیلی پیڈ اسٹیڈیم، نگار خانہ کے قریب سبزہ زار اورعلمدار حسین ڈگری کالج میں تیار کئے گئے ہیں۔محکمہ سول ڈیفنس کا بم ڈسپوزل سکواڈ اور سول ڈیفنس فورس کے 150 اہلکار بھی پولیس کے ہمراہ سکیورٹی ڈیوٹی کے لئے الرٹ کر دیئے گئے ہیں جب کہ ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ہیڈ کوارٹر کو فوکل پرسن مقرر کر دیا گیا ہے،ساتھ ہی ڈی سی آفس میں کنٹرول روم بھی فعال کردیا گیا ہے۔علاوہ ازیں سیاسی کارکنوں کی طرف سے قاسم باغ اسٹیڈیم پر قبضہ اورتوڑ پھوڑ کے واقعات کے پیش نظر ضلعی انتظامیہ الرٹ ہے اور ڈپٹی کمشنر عامر خٹک کی ہدایت پر ریسکیو 1122 میں”کوڈ ریڈ”لاگو کر دیا گیا ہے،یہ کوڈ ریڈ30 نومبر کو24 گھنٹے کے لئے لگایا گیا ہے جب کہ اس بارے میں ڈسٹرکٹ ایمرجنسی آفیسر ڈاکٹر کلیم اللہ نے لیٹر بھی جاری کردیا ہے۔کوڈ ریڈ کے اطلاق کے دوران کسی بھی ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کے لئے ریسکیوملتان کے 550 ریسکیورز کوقاسم باغ اسٹیڈیم میں تعینات کیا جائے گا،ڈاکٹر کلیم اللہ نے بتایا کہ
100 موٹر بائیک ایمبولینسسز اور 27 وین ایمبولینسسز اسٹیڈیم میں موجود رہیں گے،2ریسکیو وہیکل اور ایک ریکوری وہیل بھی30 نومبر کو اسٹیڈیم میں دستیاب رہے گی،انہوں نے کہا کہ ریسکیو ایمرجنسی کوور پلان بھی جاری کر دیا گیا ہے،ساتھ ہی روٹین ایمرجنسی سے نمٹنے کے لئے خانیوال، وہاڑی اور لودھراں سے ایمبولینسیں اور ریسکیور طلب کر لئے گئے ہیں،دوسرے اضلاع سے آنیوالی ایمبولینسسز اور ریسکیورز کو ایمرجنسی سنٹرز پر تعینات کیا جائے گا جب کہ تمام ریسکیو سٹاف کی چھٹیاں منسوخ کر دی گئی ہیں۔دریں اثناءضلعی انتظامیہ ملتان نے قاسم باغ اسٹیڈیم سے تمام سیاسی جماعتوں کے پرچم اور سکور بورڈز پر لگائےگئے بڑے پینا فلیکس اتروادیئے گئے ہیں
جب کہ اسٹیڈیم کے تمام گیٹوں کو تالے بھی لگوائے دئیے گئے ہیں،یاد رہے کہ گزشتہ دنوں
ڈپٹی کمشنر عامر خٹک نے
کورونا وائرس پھیلنے کےخدشہ کے پیش نظر سیاسی جماعتوں کو جلسے کی اجازت دینے سے انکار کر دیا تھا جب کہ جلسے کی اجازت نہ ملنے کے باوجود سیاسی کارکنوں نے اسٹیڈیم میں پارٹی پرچم لگا دیئے تھے۔دوسری طرف ضلع ملتان میں کورونا وائرس کے کیسز مسلسل بڑھ رہے ہیں،نشتر
ہسپتال کے اعدادوشمارکے مطابق کوروناوائرس کی دوسری لہر میں شرح اموات بھی بہت زیادہ ہے۔

ملتان:ڈپٹی کمشنر عامر خٹک کی ہدایت پر کورونا ایس او پیز کی خلاف ورزی کرنے والوں کےخلاف کریک ڈاون جاری ہے اور متعدد میرج ہالز، ریسٹورنٹس اور دکانوں کو سیل کردیا گیا ہے۔اسسٹنٹ کمشنر سٹی عابدہ فرید کی نگرانی میں 28 میرج ہالز کی چیکنگ کی گئی اور ایس او پیز کی خلاف ورزی پر8میرج ہالز کو سیل کر دیا گیا جبکہ 6 میرج ہالز کے خلاف مقدمہ درج اور 13 کو وارننگ جاری کی گئ۔کھلے مقامات پر لگائی جانے والی مارکیز اور بینکویٹ ہالز میں وینٹی لیشن کو ضروری قرار دے دیا گیا ہے۔ضلعی انتظامیہ نے شادی ہال مالکان کی رہنمائی کے لئے مطلوبہ معیار پر اترنے والی ماڈل مارکی کی تصاویر بھی جاری کر دیں ہیں۔
دوسری طرف پرائس مجسٹریٹس نعمان عابد اور طارق ولی نے گردیزی مارکیٹ میں کورونا ایس او پیز کی خلاف ورزی کرنیوالوں کے خلاف بھرپورایکشن لیا اور “نو ماسک نو سروس” کی خلاف ورزی پر4 دکانوں کو سیل کر دیا گیا۔پرائس مجسٹریٹس نے سیداں والا بائی پاس،چوک کمہارانوالہ اور معصوم شاہ روڈ پربھی انسپکشن کی اور کورونا ایس او پیز کی خلاف ورزی پر روپ میرج ہال اور گرینڈ میرج ہال کو وارننگ جاری کی گئ۔ایس او پیز کی خلاف ورزی پر متعدد دکانداروں پر15 ہزار روپے جرمانہ بھی عائد کیا گیا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں