الیکشن کمیشن آف پاکستان انتخابی عمل میں تمام طبقات کی شمولیت کیلئے کوشاں ہے, فضل حکیم

Spread the love

پشاور کے لوگوں میں انتخابات سے متعلق آگاہی اور آئیندہ بلدیاتی انتخابات میں ووٹوں کی شرح بڑھانے کیلئے آگاہی مہم جاری ہے۔ریجنل الیکشن کمشنر

پشاور(نمائندہ وصال احمد) بین الاقوامی گلوبل ٹائمز میڈیا رپورٹ کے مطابق الیکشن کمیشن آف پاکستان انتخابی عمل میں تمام طبقات کی شمولیت کیلئے کوشاں ہے یہ بات ریجنل الیکشن کمشنر، پشاور فضل حکیم نے آج پشاور میں قومی ووٹرز ڈے کے موقع پر ایک تقریب سے مہمان خصوصی کی حیثیت سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔تقریب میں ڈسٹرکٹ الیکشن کمشنر، عبدالقادر ، الیکشن آفیسر ضیاءالدین سمیت جملہ اہلکاروں نے شرکت کی ریجنل الیکشن کمشنر نے کہا کہ ملک میں انتخابی عمل اور ووٹ کی اہمیت کو اجاگر کرنے کیلئے الیکشن کمیشن آف پاکستان نے ہر سال ۷ دسمبر کو ووٹروں کے قومی دن کے طور پر منانے کا فیصلہ کیا تا کہ قوم کو ووٹ کی اہمیت سے آگاہ کیا جا سکے اور زیادہ سے زیادہ لوگوں کی جمہوری عمل میں شرکت کو یقینی بنا یا جا سکے انہوں نے مزید کہا کہ پشاور کے لوگوں میں انتخابات سے متعلق آگاہی اور آئیندہ بلدیاتی انتخابات میں ووٹوں کی شرح بڑھانے کیلئے آگاہی مہم جاری ہے تا کہ عوام اور ووٹروں کو ووٹ کے اندراج اور حق رائے دہی کے استعمال کی اہمیت سے آگاہ کیا جائے فضل حکیم نے بین الاقوامی گلوبل ٹائمز میڈیا یورپ کے ساتھ ایک اخباری بیان کہا کہ الیکشن کمیشن آف پاکستان نے خیبر پختونخوا سمیت ملک بھر میں انتخابی فہرستوں کی تجدید کا کام اکتوبر 2020 میں مکمل کیا جس میں ایسے تمام افراد جنہوں نے نادرا سے نئے شناختی کارڈ حاصل کیے۔ ان کے ووٹوں کا اندراج ان کے گھر گھر جا کر تصدیق کی گئ انہوں نے بتایا کہ مرد اور خواتین ووٹرز کے مابین فرق سامنے آیا ہے جس کو کم کرنے کے لئے الیکشن کمیشن نے نادرا اور سول سوسائٹی کے ساتھ مشترکہ طور پر Women NIC & Voter Registration Campaign پشاور ضلع میں بھی شروع کیا ہے جس کے تحت خواتین کے شناختی کارڈ بنوانے کے لئے نادرا کی جانب سے موبائیل رجسٹریشن وین فراہم کیا جا رہا ہے انہوں نے تمام سٹیک ہولڈرز سے اپیل کی کہ الیکشن کمیشن آف پاکستان کے ساتھ اس قومی فریضہ میں تعاون کریں تا کہ پشاور میں کوئی خاتون ووٹ کے اندراج سے محروم نہ رہے اور آنیوالے بلدیاتی عام انتخابات میں شرح ووٹ میں اضافہ ہو اس سے پہلے ڈسٹرکٹ الیکشن کمشنر، پشاور نے اپنے خطاب میں بتایا کہ گذشتہ عام انتخابات میں ووٹ ڈالنے کی شرح 55 فی صد رہی۔ اور اس میں مزید اضافے کی گنجائش ہے۔انہوں نے بلدیاتی انتخابات کی تیاریوں کے حوالہ سے متعلق کہا کہ صوبائی حکومت کیجانب سے ڈویژنل ہیڈکوارٹر اضلاع جن میں پشاور،بھی شامل ہے میں سٹی کونسل کے قیام سے متعلق قانونی تقاضے پوری ہوتے ہی وہاں بھی حلقہ بندیوں کاکام شروع ڈسٹرکٹ الیکشن کمشنر پشاور عبدالقادر نے بھی اسی دن کی مناسبت سے خطاب کیا۔ اور ووٹ کی اہمیت پر روشنی ڈالی۔ اور میڈیا، سول سوسائٹی اور تمام اسٹیک ہولڈرز سے اپیل کی کہ وہ عوام میں ووٹر آگاہی مہم میں الیکشن کمیشن کا ساتھ دیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں