جہلم کے علاقہ جلالپور شریف میں منتخب ممبران کی غفلت کے باعث سیوریج سسٹم کا ناکارہ ہونا سوالیہ نشان بن گیا

Spread the love

جہلم(چوہدری عابد محمود +دانیال عابد چوہدری) جہلم کے علاقہ جلالپور شریف میں منتخب ممبران کی غفلت کے باعث سیوریج سسٹم کا ناکارہ ہونا سوالیہ نشان بن گیا، مکینوں کی زندگیاں اجیرن بن گئیں، نالیوں اور نکاسی آب جیسی بنیادی سہولیات آج کے جدید دور میں بھی مکینوں کے لئے خواب بن کر رہ گیا، علاقہ مکین گلیوں میں کھڑے گندے پانی میں سے گزرنے پر مجبور، نمازی بھی عبادت کے لئے اسی جوہڑ نما گلیوں سے گزر کر مساجد تک جانے پر مجبور، کمسن بچے و بچیاں آئے روز پاؤں پھسلنے کے باعث گر کر زخمی ہو نے لگے، خواتین کا گزرنا بھی محال ہو کر رہ گیا، شہری گھروں میں محصور ہو کر رہ گئے، گندا پانی مچھروں کی آماجگاہ بن چکا ہے، جس سے ڈینگی سمیت دیگر وبائی اور جلدی امراض پھیلنے کا خدشہ لاحق ہو چکا ہے، اہل علاقہ کا کہنا ہے کہ نکاسی آب نہ ہونے کیوجہ سے گلیوں میں کھڑا پانی قیمتی مکانات کی بنیادیں تباہ کر رہاہے، جس کیوجہ سے گھروں کی دیواریں منہدم ہونے کے خدشات پیدا ہورہے ہیں، منتخب نمائندوں نے تاریخی قصبہ جلالپور شریف کے شہریوں کو بے یارومددگار چھوڑ رکھا ہے، شہریوں نے وفاقی وزیر سائنس اینڈٹیکنالوجی فواد حسین چوہدری سے مطالبہ کیا ہے کہ یونین کونسل جلالپورشریف کے گلی محلوں میں سیوریج سسٹم کی لائنیں بچھانے اور گلیاں پختہ کرنے کے لئے فنڈز کا اجراء کیا جائے تاکہ شہری پریشانیوں سے چھٹکارہ حاصل کر سکیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں