جہلم محکمہ لیبر کی بھتہ خوری کی وجہ سے ضلع بھرکی مختلف سیکورٹی ایجنسیاں اپنے ملازمین کا استحصال کرنے لگیں

Spread the love

جہلم(چوہدری عابد محمود +مرزاقدیر بیگ)جہلم محکمہ لیبر کی بھتہ خوری کی وجہ سے ضلع بھرکی مختلف سیکورٹی ایجنسیاں اپنے ملازمین کا استحصال کرنے لگیں، سیکورٹی اہلکار سراپا احتجاج،وفاقی وزیر داخلہ سے نوٹس لینے کا مطالبہ، تفصیلات کے مطابق ضلع بھر میں موجود متعدد سیکورٹی ایجنسیاں کام کر رہی ہیں، ان سیکورٹی ایجنسیوں نے ان پڑھ اور بے روزگار نوجوانوں کو سیکورٹی گارڈز بھرتی کر کے اپنے کارروبار کو وسعت دے رکھی ہے، یہی سیکورٹی ایجنسیاں مختلف کارروباری اداروں، پرائیویٹ سکولوں، کالجوں، بنکوں کو سیکورٹی گارڈز مہیا کرتی ہیں، بااثر مالکان اداروں سے فی گارڈ ہزاروں روپے فی کس کے حساب سے ماہانہ وصول کرتے ہیں جبکہ اپنے گارڈز کو محض چند ہزار روپے ماہانہ تنخواہ ادا کر کے تجوریاں بھرنے میں مصروف ہیں۔ ضلع جہلم کی سماجی رفاعی، فلاحی، مذہبی، شہری تنظیموں کے عمائدین نے وفاقی وزیر داخلہ، کمشنر راولپنڈی، ڈپٹی کمشنر سے مطالبہ کیاہے کہ پنجاب حکومت کی مقررہ کردہ تنخواہوں کے مطابق سیکورٹی گارڈز کو ماہانہ تنخواہیں ادا کی جائیں کم تنخواہیں دینے والی سیکورٹی کمپنیوں کے لائسنس منسوخ کئے جائیں تاکہ غریب سفید پوش طبقہ سے تعلق رکھنے والے افراد بہتر طریقے سے اپنے گھروں کی ضروریات پوری کر سکیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں