جیکب آباد میں کیمیکل ملے دودھ کے فروخت کی شکایات پر انتظامیہ متحرک نہ ہوئی

Spread the love

جیکب آباد(نامہ نگار) جیکب آباد میں کیمیکل ملے دودھ کے فروخت کی شکایات پر انتظامیہ متحرک نہ ہوئی، فوڈ اتھارٹی حکام کی مجرمانہ خاموشی سے شہری بیمار ہونے لگے۔ تفصیلات کے مطابق جیکب آباد میں کیمیکل ملے دود ھ کی فروخت کی شکایات اور ینگ ڈاکٹرز کی جانب سے ڈپٹی کمشنر کو دی گئی تحریری درخواست کے بعد بھی ضلع انتظامیہ متحرک نہیں ہوئی ہے ضلع انتظامیہ اور فوڈ اتھارٹی کی مجرمانہ خاموشی کی وجہ سے کیمیکل ملے دودھ کے استعمال کی وجہ سے شہری بیمار ہونے لگے ہیں، جماعت اسلامی کے ضلعی امیر دیدار لاشاری نے بتایا کہ شہر کے ہوٹلز میں کیمیکل ملا دودھ استعمال کیا جا رہا ہے جو انسانی صحت کے لئے زہر قاتل ہے ڈی سی کو اس حوالے سے شکایت کی ہے لیکن کوئی توجہ نہیں دی گئی اکثر دیکھا ہے ہوٹلز پر گھر سے دودھ کے بھرے کین لائے جا رہے ہیں جن کے گھر میں بھینس ہے نہ بکری ہوٹلز پر وافر مقدار میں دودھ موجود ہے اور ڈرم بھرے پڑے ہیں حالانکہ جیکب آباد میں تو اتنے بھینسوں کے باڑے نہیں ہیں اشیاء خوردونوش میں ملاوٹ سے بیماریاں پھیل رہی ہیں معدے کی خرابی اب تو عام ہو گئی ہے انتظامیہ اپنی ذمہ داری ادا کرے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں