چھ ماہ قبل ہندو نوجوان کو بیدردی سے قتل کرکے لاش جلانے کا معاملہ

Spread the love

جیکب آباد(نامہ نگار)جیکب آباد میں چھ ماہ قبل ہندو نوجوان کو بیدردی سے قتل کرکے لاش جلانے کا معاملہ عدالت نے کیس انسداددہشت گردی شکارپور کی عدالت بھیج دیا تفصیلات کے مطابق جیکب آباد کے فرسٹ سول جج امتیا ز لاکھیر کی عدالت نے چھ ماہ قبل ڈنگر محلہ میں بیدردی سے قتل کئے گئے ہندو نوجوان مہیش کمار کے قتل کا کیس انسداد دہشت گردی شکارپور کی عدالت منتقل کرنے کے احکامات دیتے ہوئے کہا کہ یہ کیس انسداد دہشت گردی عدالت کا ہے واضح رہے کہ جیکب آباد کے سٹی تھانہ کی حدود میں چھ ماہ قبل ہندو نوجوان مہش کمار کو فائرنگ کرکے قتل کرنے کے بعد لاش جلا کر کچرے میں پھینک دی گئی تھی،پولیس نے مارچ کے مہینے میں ایک ملزم ونیب کمار کو گرفتار کیا تھاجس نے پولیس تفتیش میں مہیش کمار کو قتل کرنے کااعتراف بھی کیا،ملزم بااثر ہونے کے باعث فیل کے بجائے کئی ماہ سے ہسپتال وارڈ میں علاج کے بہانے قید ہے جسے وہاں تمام سہولیات میسر ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں