جیکب آباد کے جمالی واہ نہر میں دو معصوم بچے ڈوب گئے

Spread the love

جیکب آباد(نامہ نگار) جیکب آباد کے جمالی واہ نہر میں دو معصوم بچے ڈوب گئے، ورثہ کی جانب سےتلاش جاری، ورثہ کا محکمہ آبپاشی کے خلاف ریلوے پھاٹک پر دھرنا۔ تفصیلات کے مطابق جیکب آباد کے سول لائن تھانہ کی حدود کریم آباد جمالی واہ محلہ کے رہائشی غلام رسول لاشاری کی 6 سالہ بیٹی ظہران اور جان محمد جلال لاشاری کا 7 سالہ بیٹا خان محمد گھر کے باہر کھیلتے ہوئے گھر کے سامنے سے گذرنے والے جمالی واہ نہر میں گر کر ڈوب گئے اطلاع پر بچوں کے ورثہ پہنچے اور بچوں کی تلاش کی لیکن نہر میں پانی زیادہ ہونے اور پانی کا بھاؤ تیز ہونے کی وجہ سے بچوں کا کوئی سراغ نہیں مل سکا، نہر میں پانی زیادہ ہونے پر ورثہ نے محکمہ آبپاشی کے حکام سے رابطہ کرکے پانی کو بند کرنے کا کہا لیکن پانی بند نہیں کیا گیا جس پر ورثہ نے جمالی واہ ریلوے پھاٹک کو بند کرکے دھرنا دیا جس کے باعث دونوں اطراف سے گاڑیوں کی قطاریں لگ گئی اس موقع پر بچوں کے ورثہ نے کہا کہ محکمہ آبپاشی کے ایس ڈی او اور انتظامیہ کو پانی کم کرنے اور بچوں کی تلاش میں مدد کی اپیل کی لیکن انہوں نے کوئی تعاون نہیں کیا جس کی وجہ سے مجبوراً دھرنا دیا ہے انہوں نے کہا کہ محکمہ آبپاشی کے ایس ڈی او اور ضلع انتظامیہ کے متعلقہ افسران کے خلاف کاروائی کرکے ہمارے ساتھ انصاف کیا جائے، تاہم آخری اطلاعات تک ڈوبنے والے بچوں کا کوئی سراغ نہیں مل سکا تھا اور بچوں کی تلاش جاری تھی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں