ہڑپہ سرکاری زمین پر لینڈ مافیا کا قبضہ

Spread the love

ہڑپہ ،سرکاری زمین پر لینڈ مافیا کا قبضہ برساتی نالہ،قبرستان،اورمحکمہ تعلیم کی جگہ تاحال واگزار نہ ہو سکی ،ڈپٹی کمشنر سے نوٹس کا مطالبہ

نرسری کی آڑ میں سرکاری ملازم کا سکول کی جگہ پرقبضہ ،جگہ واگزار کروا کربچوں کی سیر وتفریح کیلیئے پارک بنایا جائے ،عوامی و سماجی حلقے

ہڑپہ ( آ صف ندیم سے) ،تفصیل کے مطابق جناح ٹاوٗن ہڑپہ سے تعلق رکھنے والے عوامی و سماجی افراد نے حکومت کی تجاوزات کے خلاف جاری مہم اورہڑپہ میں سرکاری زمینوں پر غیر قانونی قبضہ،ڈپٹی کمشنر ساہیوال سے سرکاری جگہ کی واگزاری کا مطالبہ ،ہڑپہ میں بننے والی غیر قانونی ہاوٗسنگ اسکیموں کے مالکان کا برساتی نالے پر قبضہ کر کے غیرقانونی ،اور غیر معیاری پل اور پکی سڑک تعمیر کرتے ہوئے ٹاوٗن کا مین راستہ بنا کر برساتی نالے پر قبضہ کرنا ،اور دیگر ٹاوٗن مالکان کا برساتی نالے کی جگہ پرسڑکیں ،پلاٹ بنا کر فروخت کرنا،اس کے علاوہ قبرستان کی جگہ پر لینڈ مافیا کا غیر قانونی قبضہ کرکے گھروں کی تعمیرسمیت ریلوے ٹریک اور مین جی ٹی روڈ کے درمیان میں واقع محکمہ تعلیم کی وہ جگہ جس پر محکمہ تعلیم نے سکول کی بلڈنگ بنانے سے انکار کردیا تھا اب اس تقریبا22کنال رقبہ کے کچھ حصہ پر مقامی آبادی نے گٹروں کا پانی چھوڑ رکھا ہے ا ور باقی جگہ پر محکمہ جنگلات کے حاضر سروس ملازم نے نرسری کی آڑ میں قبضہ کرکے نرسری لگا رکھی ہے اوراس نرسری جو سرکار ی وسائل نہری پانی اور سرکاری جگہ پر ہزاروں روپے نا جائز کمائے جا رہے ہیں جس سے وہ اپنے پرائیویٹ ملازم کوماہانہ ہزاروں روپے تنخواہا ا دا کرنے اور اپنے اثاثے بنا رہا ہے کو واگزار کروایا جائے انہوں نے ڈپٹی کمشنر سے سکول کی سرکاری جگہ کی واگزاری کے ساتھ ہی سکول کی جگہ پر پارک کی تعمیرکا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ جناح ٹاوٗن ہڑپہ کی بیس تیس ہزار افرادکی آبادی کی سیروتفریح اوربچوں کی ذہنی نشونما کیلیئے پارک بنایا جائے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں