عوامی نیشنل پارٹی تحصیل لنڈی کوتل کے صدر ولی خان شینواری کے حجرے میں ورکرز کنونشن منعقد ہوئی

Spread the love

لنڈی کوتل سے امان علی شینواری ۔
عوامی نیشنل پارٹی تحصیل لنڈی کوتل کے صدر ولی خان شینواری کے حجرے میں ورکرز کنونشن منعقد ہوئی جسمیں اے این پی کے صوبائی جنرل سیکرٹری و پارلیمانی لیڈر سردار حسین بابک, اے این پی ضلع خیبر کے صدر شاہ حسین شینواری سمیت کثیر تعداد میں اے این پی کے ورکرز نے شرکت کی
اس موقع پر سردار حسین بابک نے کہا کہ موجودہ حکومت قبائل کو این آیف سی ایوارڈ میں تین فیصد حصہ کیوں نہیں دیتا کہاں گئے قبائلی عوام کی ایک ہزار ارب روپے اور انضمام کے وقت قبائلی عوام کے ساتھ کئے گئے وعدوں کو حکومت کیوں پورے نہیں کرتے یہ اس لئے کہ سازش کے تحت انضمام کو ناکام بنانے کی کوشش کرتے ہیں
پی ٹی آئی حکومت بری طرح ناکام ہیں اور ہر محاذ پر فیل ہیں کیونکہ اپنے صوبائی حکومت کو بجلی رائلٹی اور دیگر بقایاجات تک نہیں دیتے چھ ہزار میگا واٹ بجلی ہم بناتے ہیں لیکن افسوس کہ 16 گھنٹے لوڈشیڈنگ اور کم وولٹیج سب سے زیادہ خیبر پختونخواہ میں ہے جس کا بنیادی مقصد پختونوں کو پسماندگی کی طرف دھکیلنا ہے اگر پختونخواہ کو وفاق سے اپنے حقوق مل گئے تو یہ ملک کا سرمایہ دار صوبہ ہوگا جو کبھی قرض نہیں لے گا بلکہ دوسرے صوبوں کو دیگا انہوں نے کہا کہ پختون قوم عرصہ دراز سے خپلہ خاورہ خپل اختیار آئینی و قانونی طریقے سے مانگ رہے ہیں ہم خدائی خدمتگار باچاخان کے پیروکار ہیں اور ان کے عدم تشدد کے فلسفے پر یقین رکھتے ہیں اور جبر و ظلم و بربریت کا ہر جگہ پر مخالفت کرتے ہیں اور کرینگے انہوں نے کہا کہ افغانستان میں جنگ اسلام کا نہیں بلکہ تخت کابل کا ہے پوری دنیا پختون قوم کے خلاف ہیں جنہوں نے ایک سوچ سمجھے منصوبے کے تحت ہم پر غیروں کا جنگ مسلط کیا ہے لیکن اب پختونوں کو جاگنا ہوگا اور اپنے حقوق کیلئے عوامی نیشنل پارٹی کا ساتھ دینا ہوگا کیونکہ واحد اے این پی پختونوں کی عوامی جماعت ہیں جنہوں نے ہر پلیٹ فارم پر ان کے حقوق کیلئے آواز اٹھایا ہے اور آئندہ بھی ہر قسم کی قربانی دینے کیلئے تیار ہیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں