ہلال احمر کے پلاٹ پر قبضہ کرکے تین منزلہ عمارت بنانے کا معاملہ عدالت پہنچ گیا

Spread the love

جیکب آباد(نامہ نگار) جیکب آباد میں ہلال احمر کے پلاٹ پر قبضہ کرکے تین منزلہ عمارت بنانے کا معاملہ عدالت پہنچ گیا، 16 اکتوبر کو سماعت ہوگی، نوٹس جاری۔ تفصیلات کے مطابق جیکب آباد کے قائد اعظم روڈ پر ہلال احمر کی کروڑوں روپے مالیت کی اراضی پر مبینہ قبضہ کرکے تین منزلہ عمارت تعمیر کرنے والا معاملہ عدالت پہنچ گیا ہے، ہلال احمر کے مقامی عملدار کی جانب سے وکیل کی معرفت جیکب آباد کے فرسٹ سینئر سول جج کی عدالت میں درخواست داخل کرائی گئی ہے، عدالت میں جمع کی گئی درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ ہلال احمر کی کروڑوں روپے کے پلاٹ پر بااثر کی جانب سے قبضہ کرکے تین منزلہ عمارت تعمیر کرائی گئی ہے نوٹس کے باوجود پلاٹ سے قبضہ ختم نہیں کیا گیا اس سلسلے میں ہلال احمر حکام کے وکیل طاہر علی رند نے رابطہ کرنے پر صحافیوں کو بتایا کہ سندھ پرائم سیس رینٹ 1979 ایکٹ کے تحت جیکب آباد کی عدالت میں محمد علی شیخ کے خلاف درخواست داخل کرائی گئی ہے عدالت نے فریقین کو نوٹس جاری کردئیے ہیں اور 16 اکتوبر کو کیس کی سماعت ہوگی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں