جیکب آباد میں ضلع انتظامیہ کی عدم توجہی کی وجہ سے تاریخی ورثہ تباہ ہونے لگا

Spread the love

جیکب آباد(نامہ نگار) جیکب آباد میں ضلع انتظامیہ کی عدم توجہی کی وجہ سے تاریخی ورثہ تباہ ہونے لگا،وکٹوریہ ٹاور گندگی کا ڈھیر بن گیا،گھڑیا ل عرصے سے بند،سامان چوری ہونے کا انکشاف،ٹاور کی دیواریں کمزور ہو گئیں،آوارہ جانورنے مسکن بنالیا،چاردیواری کی گرلیں بھی ٹوٹ پھوٹ کا شکار تفصیلات کے مطابق جیکب آباد ضلع انتظامیہ کی عدم توجہی کی وجہ سے شہر کے وسط میں واقع تاریخی ورثہ وکٹوریہ ٹاور تباہ حالی کا شکار ہو گیا ہے یہ ٹاور ملکہ برطانیہ وکٹوریہ کی گولڈن جوبلی تقریبات کی یاد میں 1887میں بر گیڈئیر جنرل جان جیکب کے قریبی عزیز کرنل ایس ایس جیکب نے تعمیر کرایا تھا60فٹ اونچا اور 10فٹ چوڑاے وکٹوریہ ٹاور کے چاروں اطراف گھڑیال لگا ہوا ہے جو کہ اب کافی عرصے سے خراب ہے معلوم ہوا ہے کہ وکٹوریہ ٹاور میں لگے گھڑیا ل کا سامان بھی چوری ہو گیا ہے وکٹوریہ ٹاور جو کہ جیکب آباد کی پہچان ہے اپنی شناخت کھوتا جا رہا ہے ٹاور کی دیواریں بوسیدہ ہو گئی ہیں چاردیواری میں لگی گرل اور چاروں طرف سے لگے دروازے ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہیں ٹاور کے سامنے گندگی کے ڈھیر لگے ہوئے ہیں اور آوارہ جانوروں نے وکٹوریہ ٹاور کواپنا مسکن بنا لیا ہے کسی دور میں ٹاور میں لگے گھڑیال کی آواز 8میل تک سنائی دیتے تھی جس سے لوگ اپنی گھڑیوں کا وقت درست کرتے تھے لیکن اب یہ ٹاور بلند بالا عمارتوں میں چھپ گیا ہے،ٹاور میں لگے گھڑیال کا سامان تک چوری ہونے کی اطلاع ہے،ٹاور پر لگی لائٹنگ کا نظام بھی تباہ ہو گیا ہے بلدیہ کی جانب سے ٹاور پر مقرر انچارج حلیم بروہی نے ٹاور میں لگے خراب گھڑیال کو درست کرواکر عارضی بنیادوں پر چلایا حلیم بروہی کو ہٹانے کے بعد وکٹوریہ ٹاور جیسے لاوارث ہو گیا گھڑیال کے شیشے تک ٹوٹ گئے ہیں،تاریخی ورثے کو بچانے کے لئے ضلع انتظامیہ نے کوئی اقدامات نہیں کئے افسران کی مجرمانہ غفلت کی جہ سے جیکب آباد کے شہری اپنا تاریخی اثاثہ کھوتا جارہا ہے کوئی بھی شخصیت جیکب آباد کے دورے پر آتی تھی تو انہیں وکٹوریہ ٹاور ضروردکھایا جاتا تھا لیکن اب ایسا نہیں کیا جاتا اس سلسلے میں عیسائی رہنما برونر بی نیوٹن نے رابطے پر بتایا کہ جنرل جان جیکب کی وفات کے بعد ملکہ الزبتھ ٹو کی جیکب آباد آمد کے موقع پر وکٹوریہ ٹاور تعمیر کیا گیاپاکستان کے قیام کے بعد بھی برطانوی حکومت وکٹوریہ ٹاور کی دیکھ بھال کے لئے فنڈس فراہم کرتی تھی،ضلع انتظامیہ کی جانب سے ٹاورپر عملہ مقرر تھا،ڈی سی سبھاگو خان جتوئی نے وکٹوریہ ٹاور کوفعال کیا اور بہتری کے لئے اقدامات کئے انکے بعد کسی نے وکٹوریہ ٹاور پر توجہ نہیں دی اس سلسلے میں ڈپٹی کمشنر جیکب آباد حفیظ سیال سے رابطے کی کوشش کی گئی پر انکا نمبر اٹینڈ نہ ہوا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں