جیکب آباد شہر کے اہم ترین کشتی چوک پر بنی تاریخی کشتی کو ضلع انتظامیہ نے مسمار کردیا،

Spread the love

جیکب آباد(نامہ نگار)جیکب آباد شہر کے اہم ترین کشتی چوک پر بنی تاریخی کشتی کو ضلع انتظامیہ نے مسمار کردیا، شہریوں کا احتجاج۔ تفصیلات کے مطابق جیکب آباد شہر کے اہم ترین اور تاریخی کشتی چوک پر بنی کشتی کو ضلع انتظامیہ نے مسمار کردیا ہے، ڈپٹی کمشنر ہاؤس کے گیٹ کے ساتھ شہر کے مین چوک پر بنی کشتی کی وجہ سے اس چوک کا نام کشتی چوک سے مشہورتھا لیکن ضلع انتظامیہ نے تجاوزات کی آڑ میں اسے مسمار کردیا ہے، ذرائع کے مطابق کشتی چوک کی بنی کشتی کو مسمار کرنے کے بعد یہاں قبضے کی تیاریاں کی جارہی ہے اور معلوم ہوا ہے کہ یہاں بااثر افراد ملکر دوکانیں تعمیر کرانا چاہتے ہیں، شہر کے تاریخی کشتی چوک پر بنی کشتی کو مسمار کرنے پر شہریوں نے شدیدغم و غصہ کا اظہار کیا ہے۔ اس سلسلے میں سماجی رہنما جان اوڈھانو نے کہا کہ کشتی چوک پر بنی کشتی تاریخی ورثہ تھی جس کو مسمار کرکے شہر کی تاریخ مسمار کیا گیا ہے، یادگار اور تاریخی ورثہ کی حفاظت کی جاتی ہے اور ان کی مزیدخوبصورتی کے لیے اقدامات کئے جاتے ہیں لیکن یہاں تجاوزات کی آڑ میں اس کو مسمار کردیا گیا ہے جو کہ قابل افسوس اور قابل مذمت ہے، انہوں نے کہا کہ کشتی چوک پر بنی کشتی تجاوزات نہیں بلکہ ایک تاریخی ورثہ اور شہر کی خوبصورت کی علامت تھی جس کو مزید خوبصورت کرنے کے بجائے بے رحمی سے مسمار کیا گیا ہے،انہوں نے خدشہ ظاہر کیا کہ لگتاہے کہ اب انتظامیہ تاریخی ورثوں کو مسمار نہ کردے اس لیے شہری تنظیموں کو اپنے تاریخی ورثے بچانے کے لیے میدان میں آنا ہوگا، انہوں نے مطالبہ کیا کہ فلفور دوبارہ کشتی چوک پر کشتی بنائی جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں