ایس ایس پی جیکب شمائل ریاض ملک کو ہٹایا جائے، اپوزیشن لیڈر سندھ اسمبلی حلیم عادل شیخ

Spread the love

جیکب آباد(نامہ نگار)ایس ایس پی جیکب شمائل ریاض ملک کو ہٹایا جائے، اپوزیشن لیڈر سندھ اسمبلی حلیم عادل شیخ کا اسٹیبلشمنٹ ڈویژن کو خط، ایس ایس پی جیکب آباد اسمگلنگ، کرپشن اور سیاسی انتقامی کاروائیوں میں ملوث ہیں، خط میں متن۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی رہنما اور سندھ اسمبلی میں قائد حزب اختلاف حلیم عادل شیخ نے سیکریٹری اسٹیبلشمنٹ ڈویژن کو خط لکھ کر ایس ایس پی جیکب آباد کو ہٹانے کا مطالبہ کیا ہے حلیم عادل شیخ نے اپنے خط میں لکھا ہے کہ ایس ایس پی جیکب آباد اسمگلنگ، کرپشن اور سیاسی انتقامی کاروائیوں میں ملوث ہیں ایس ایس پی جیکب آباد سیاسی بنیادوں پر پوسٹ ہوئے ہیں، ان کے آتے ہی جیکب آباد میں امن امان کی صورتحال بدتر ہوچکی ہے خط کے متن میں مزید لکھا گیا کہ ایس ایس پی مکمل طور پر سیاسی بن کر پیپلزپارٹی کی ایما پر کام کررہے ہیں اور پیپلزپارٹی کے کہنے پر ہمارے لوگوں پر انتقامی کارروائیاں کروا رہے ہیں، پی پی کے ہر مقامی رہنماء کو بغیر کسی تھریٹ کے پولیس سیکورٹی فراہم کی گئی ہے، 22 مئی کو ون فائیو دفتر کے سامنے 2 شہریوں کو پولیس نے گولیاں مار کر ہلاک کیااورعدالت قتل سمیت مخالفین پر جھوٹے کیسز بنانے سمیت دیگر کارروائیوں میں ملوث ہیں، وفاقی وزیر میاں محمد سومرو کو جرائم پیشہ افراد نے سرعام دہمکیاں دی، اس حوالے سے بھی ایس ایس پی نے نہ کارروائی کی نہ کسی کے خلاف مقدرمہ درج کیا، ہندو پنچائت کے صدر لال چند سیتلانی کو بیٹے سمیت پولیس نے اغوا کر کے تشدد کا نشانا بنایا،لال چند سیتلانی کو پی ٹی آئی کو ووٹ دینے کی سزا دی گئی، جیکب آباد میں نیب ٹیم پر حملہ کرنے والے ایس ایس پی کے ساتھ موجود ہیں، ایس ایس پی جیکب آباد پیپلزپارٹی کا محرہ بن کر ہمارے لوگوں پر کارروائیاں کر رہے ہیں، جیکب آباد میں امن امان کی صورتحال مکمل خراب ہوچکی ہے، ایس ایس پی کو ہٹاکر ادارتی کاروائی کی جائے اورایس ایس پی کے جرائم کے حوالے سے جے آئی ٹی تشکیل دی جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں