ملز مالکان کے مظالم، زیادتیوں اور کم اجرت دینے کے خلاف احتجاجی ریلی نکالی گئی

Spread the love

جیکب آباد (نامہ نگار) آل سندھ بلوچستان مل مزدور یونین کی جانب سے ملز مالکان کے مظالم، زیادتیوں اور کم اجرت دینے کے خلاف احتجاجی ریلی نکالی گئی اور مظاہرہ کیا گیا۔ جیکب آباد میں گذشتہ روز یونین کے صدر حاجی معشوق خارانی، ستار جکھرانی، سوالی خان اور دیگر کی قیادت میں ملز مزدورں کی جانب سے احتجاجی ریلی اولڈ اناج منڈی سے پریس کلب کے تک نکالی گئی اور مارچ کے دوران نعریبازی کی گئی، پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ بھی کیا گیا۔ اس موقع پر رہنماؤں نے کہا کہ ٹیکس سے بچنے کے لیے مزدوروں کے قوانین کے برخلاف لسٹ بنائی گئی ہے، جس کے باعث ملز مزدوروں میں شدید غم وغصہ ہے، چار سالوں سے ڈی سی کو شکایت کرنے کے باوجود مزدوروں کے ساتھ ظلم کیا جارہا ہے، مزدوروں کو بنیادی سہولیات مہیا نہیں کی جارہی ہیں اور آواز بلند کرنے پر ملزم مالکان جھوٹے مقدمات میں پھنسا رہے ہیں اور کہہ رہے ہیں کہ ڈی سی ان کے ماتحت ہے اگر واقعی ایسا ہے تو ڈی سی کو استعفیٰ دیدینا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ مہنگائی کے دور میں روزانہ دھاڑی پر کم اجرت دی جارہی ہے، جبکہ سوشل سیکورٹی اور لیبر ڈپارٹمنٹ کی جانب سے مزدوروں کو بھی نظر انداز کیا جارہا ہے، اور اس مہنگائی کے دورمیں مزدور دو وقت کی روٹی کے لیے پریشان ہے۔ انہوں نے ڈی سی جیکب آباد سے مطالبہ کیا کہ احتجاج کا نوٹس لیکر ملز مالکان کے خلاف کاروائی کی جائے اور انصاف فراہم کیا جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں