پیناڈول گولیاں نایاب، محکمہ صحت کے افسران بھی میٹھی نیند سو گئے

Spread the love

جہلم(چوہدری عابد محمود +عبدالغفارآزاد)جہلم پیناڈول گولیاں نایاب، محکمہ صحت کے افسران بھی میٹھی نیند سو گئے، تفصیلات کے مطابق شہر میں پینا ڈول کی گولیاں نایاب ہو گئیں،متعدد میڈیکل اسٹورز پر پینا ڈول گولیاں دستیاب نہیں جبکہ چند ایک میڈیکل اسٹور ز مالکان 30 سے 40 روپے میں 10 ٹیبلٹ کا پتہ فروخت کررہے ہیں، چیک اینڈ بیلنس کا نظام مفلوج ہو کر رہ گیا، محکمہ صحت کے افسران بھی میٹھی نیند کے خراٹے لینے میں مگن، شہریوں کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ جس طرح کورونا وائرس کی وباء پہلے پھیلی اس وقت بھی پینا ڈول گولیاں نایاب ہو گئیں تھیں، جبکہ اب اومی کرون کی تیزی سے پھیلتی ہوئی نئی لہر نے بھی پاکستان کے بڑے شہروں میں پنجے گاڑ نے شروع کررکھے ہیں جبکہ اس کے ساتھ ہی پینا ڈول گولیاں بھی مارکیٹ سے سوچی سمجھی سازش کے تحت غائب کر دی گئی ہیں اور میڈیسن مافیا نے اس کی مصنوعی قلت پیدا کر دی ہے، جس سے پینا ڈول ٹیبلٹ بلیک میں فروخت ہونا بھی شروع ہو گئی ہے، مارکیٹ کے ہول سیلرز نے باقی میڈیسن کو پینا ڈول کے ساتھ مشروط کر دیا، یعنی 10سے 15 ہزار کی دوسری میڈیسن لینے والوں کو پینا ڈول ٹیبلٹ دی جائے گی اس سلسلے میں جب بیشتر میڈیکل سٹورز کا دورہ کیا گیا تو متعدد میڈیکل اسٹورز پر پینا ڈول ٹیبلٹ نایاب تھیں اور میڈیکل اسٹور والوں کا کہنا ہے کہ شہر میں پینا ڈول شاٹ ہوچکی ہے اور ہمیں اس کی سپلائی نہیں ہورہی، شہریوں نے محکمہ صحت کے ضلعی افسران سے مطالبہ کیاہے کہ شہر کے میڈیکل اسٹوروں پر پینا ڈول گولیاں دستیاب کروائی جائیں تاکہ بوقت ضرورت مریض پینا ڈول کا استعمال کرکے تکلیف سے نجات حاصل کر سکیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں