جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے چئیرمین راجہ نجابت حسین کی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی سے ملاقات

Spread the love

لندن ( عارف چودھری) جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے چیئرمین راجہ نجابت حسین کی وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی سے وزارتِ خارجہ میں ملاقات ، ملاقات میں مقبوضہ کشمیر میں جاری انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں، بھارتی اقدامات، سفارتی سطح پر کشمیر کے حوالے سے جاری جدو جہد، کوششوں اور خطے میں امن و استحکام کو درپیش خطرات کے حوالے سے تفصیلی تبادلہ خیال،چیئرمین تحریک حق خودارادیت انٹر نیشنل راجہ نجابت حسین نے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کو برطانیہ و یورپ میں تحریک حق خود ارادیت کی سفارتی کشمیر مہم ، ممبران پارلیمنٹ ، کونسلرز ، سیاسی پارٹیوں میں لابی مہم اور یورپ و برطانیہ میں سرگرمیوں کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دی ۔ اس موقع پر وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ مسئلہ کشمیر ہماری خارجہ پالیسی کا اہم ستون ہے،نہتے کشمیریوں پر ڈھائے جانے والے مظالم کو عالمی سطح پر اُجاگر کرنے کے حوالے سے بیرون ملک مقیم پاکستانیوں اور کشمیریوں کی خدمات قابل تحسین ہیں ،بھارت کے5اگست کے یکطرفہ اور غیر قانونی اقدامات کو تمام کشمیری یکسر مسترد کر چکے ہیں، کشمیری اپنے تسلیم شدہ حق خود ارادیت کا مطالبہ کر رہے ہیں جبکہ بھارت طاقت و جبر سے کشمیریوں کی آواز دبانے کی کوشش کر رہا ہے ،کشمیریوں کی آواز کو دبانے کیلئے بھارتی قابض افواج کی جانب سے نہتے کشمیریوں پر مظالم کے پہاڑ توڑے جا رہے ہیں، پاکستان کشمیریوں کی آواز کو مسلسل اقوام متحدہ، یورپین یونین، انسانی حقوق کے اداروں، او آئی سی سمیت اہم عالمی فورمز پر اٹھا رہا ہے ۔پاکستان کشمیریوں کے جائز حق، حق خودارادیت کے حصول تک ہر سطح پر اخلاقی، سفارتی اور سیاسی معاونت جاری رکھے گا ۔ اس موقع پر ملاقا ت میں چیئرمین تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل راجہ نجابت حسین نے کشمیریوں کی آواز کو موثر انداز میں عالمی سطح پر اجاگر کرنے اور بہترین خارجہ پالیسی اپناتے ہوئے، بھارتی مظالم کو منظر عام پر لانے پر وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کا شکریہ ادا کیا۔چیئرمین تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل راجہ نجابت حسین نے ملاقا ت میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ تحریک حق خود ارادیت برطانیہ، یورپ، پاکستان اور آزاد کشمیر میں کانفرنسز، سیمینارز کے انعقاد کے ذریعے کشمیریوں پر ڈھائے جانے والے مظالم کا پردہ چاک کر رہی ہے، ہم نے برطانوی پارلیمنٹ کے ارکان ، برطانوی پارٹیوں ، یورپین پارلیمنٹ کے ارکان، کونسلرز ، مئیرز اور دیگر عالمی فورمز پر مسلسل لابنگ کے ذریعے ان کی توجہ کشمیر کی جانب مبذول کرانے کی مسلسل کوشش کی ۔ اکتوبر سے تحریک حق خود ارادیت کی ٹیم نئی کشمیر سفارتی مہم کے تحت سرگرمیاں منعقد کر رہی ہے جس میں برطانوی پارلیمنٹ کے ممبران ، برطانوی پارٹیوں کے ذمہ داران اور کشمیر دوست گروپوں کے سربراہان کے تعاون سے تقریبات کا انعقاد اور لابی کی جا رہی ہے ۔ راجہ نجابت حسین نے مزید کہا کہ بھارت کے کشمیر میں غیر آئینی اقدامات ، حریت قائدین ،خواتین اور نوجوانوں کی گرفتاریوں کے علاوہ نوجوانوں کو ٹارگٹ کر کے قتل کرنے جیسے اقدامات کو روکنے کے لئے عالمی فورمز پر مؤثر انداز میں کام کرنے کی ضرورت ہے ۔ بھارت عالمی سطح پر اپنے مذموم اقدامات کو چھپانے اور اقوام عالم کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کے لئے جس انداز میں سفارتی محاذ پر سرگرم ہے اس کے لئے ہمیں بھرپور اور مؤثر حکمت عملی کے تحت سفارتی محاذ کو متحرک کرنا ہو گا ۔ راجہ نجابت حسین نے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی سے اس بات پر زور دیا کہ دنیا بھر کے سفارتخانوں میں عملہ بالخصوص سفرا ء کو ان ممالک میں لابنگ ، کشمیر میں بھارتی ظلم و بربریت کو اجاگر کرنے کے لئے متحرک کیاجائے ۔ ایک جارحانہ اور بھرپور سفارتی مہم سے ہی ہم بین الاقوامی محاذ پر اپنے نتائج حاصل کر سکتے ہیں ۔ اس موقع پر ملاقات میں تحریک حق خود ارادیت کے چیئرمین راجہ نجابت حسین کے علاوہ یوتھ پارلیمنٹ کے صدرعبید الرحمن قریشی ،برطانیہ سے تحریک حق خود ارادیت یوتھ ونگ کے چیئرمین ذیشان عارف بھی موجود تھے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں